Home / ٹک ٹاک کومکمل پابندی کےخطرےکاسامنا

ٹک ٹاک کومکمل پابندی کےخطرےکاسامنا

US House passes TikTok ban bill

ویب ڈیسک ۔۔ دنیاکی معروف ویڈیوشیئرنگ ایپ ٹک ٹاک کیلئےنئی مشکل کھڑی ہوگئی ۔ امریکی ایوان نمائندگان نےچینی ایپلیکیشن پرپابندی کوعملی جامہ پہناتےہوئےاس پرپابندی کابل کثرت رائےسےمنظورکرلیا۔

موجودہ بل مارچ میں منظورکئےگئےبل سےکافی حدتک مطابقت رکھتاہےلیکن ایک فرق یہ ہےکہ اس بل میں ایپلی کیشن پر پابندی اور چینی کمپنی سے علیحدگی کے حوالے سے دی گئی مدت میں سابقہ بل کی نسبت نرمی کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔

موجودہ بل باقاعدہ قانون کی شکل اختیارکرجاتاہےتوامریکہ میں پابندی سےبچنےکیلئےٹک ٹاک کواپنی کمپنی کیلئےدوسوستردن کےاندرایک نیامالک ڈھونڈناہوگاجواگرکوئی امریکن ہوتوبہت اچھارہےگا۔

مارچ میں ٹک ٹاک پرپابندی کےبل میں کہاگیاتھاکہ ٹک ٹاک کی پیرنٹ کمپنی بائٹ ڈانس کوایک سواسی دن کےاندرایپلی کیشن کانیامالک ڈھونڈناہوگا۔ ناکامی کی صورت میں امریکا میں ایپل اورگوگل پلےاسٹورپراس پر پابندی عائد کردی جائے گی۔

اس بل کامنظورہوناٹک ٹاک کیلئےدووجوہات کی بناپرحیران کن ہے۔ ایک تویہ ہےٹک ٹاک اس بل کےخلاف کافی عرصےسےامریکہ میں لابنگ کررہی تھی، دوسرےیہ کہ امریکی صدرنےاپنی صدارتی مہم کیلئےدوماہ پہلےہی ٹک ٹاک کوجوائن کیا۔

واضح رہےکہ امریکہ میں ٹک ٹاک کےسترہ کروڑسےزائدصارفین ہیں اوراس تعدادمیں مسلسل اضافہ ہورہاہے۔

امریکی قانون سازوں کی رائےمیں چین بیسڈکمپنی کی ایپلی کیشن سےکروڑوں امریکیوں کاڈیٹابلکہ امریکیوں کی حساس معلومات چین کےہاتھ لگ سکتی ہیں۔ امریکہ اس سےپہلےموبائل فون بنانےوالی معروف چینی کمپنی ہواوےپربھی جاسوسی کےالزامات لگاکرامریکہ میں پابندی عائدکرچکاہے۔

معروف سوشل میڈیاپلیٹ فارم ایکس کےمالک ایلون مسک نےٹک ٹاک پرپابندی کی مخالفت کرتےہوئےاسےآزادی اظہاررائےکےخلاف قراردیاہے۔ کہاایساکرناامریکہ جیسےملک کوزیب نہیں دیتا۔

یہ بھی چیک کریں

OpenAI Co founder resigns

مصنوعی ذہانت کی بڑی کمپنی کاشریک بانی مستعفی

ویب ڈیسک ۔۔ مصنوعی ذہانت کےمیدان میں دنیاکی بڑی کمپنیوں میں سےایک اوپن اےآئی کےشریک …