کورونا وائرس
پاکستان میں
مصدقہ کیسز
(+7,539 ) 1,393,887
اموات
(+25) 29,162
صحتیاب مریض
1,272,871
فعال کیسز
91,854
Last updated: جنوری 27, 2022 - 5:27 شام (+05:00) دوسرے ممالک
Home / ڈسکہ ضمنی الیکشن:دھاندلی کی تفصیلی رپورٹ؟

ڈسکہ ضمنی الیکشن:دھاندلی کی تفصیلی رپورٹ؟

NA-75 Daska By Election Inquiry Report

ویب ڈیسک ۔۔ این اے75ڈسکہ کےضمنی الیکشن میں پریزائیڈنگ افسران کےغائب ہونےکی تہلکہ خیزانکشافات سےبھرپورانکوائری رپورٹ منظرعام پرآگئی ہے۔ انکوائری رپورٹ جوائنٹ صوبائی الیکشن کمشنرسعیدگل نےتیارکی ہے۔ رپورٹ کےمطابق :

رواں سال فروری میں ڈسکہ کےحلقہ این اے75میں ہونےوالےضمنی الیکشن کےدوران الیکشن ڈیوٹی پرمامورعملےاوردوسرےسرکاری افسران نےاپنےغیرقانونی آقاوں کےہاتھوں میں کھیلتےہوئےکٹھ پتلی کاکرداراداکیا۔

انکوائری رپورٹ کےمطابق ذمہ داران نےاپنی قانونی ڈیوٹی ادانہیں کی اوریہ کہ ڈپٹی ڈائریکٹرسیالکوٹ کالجزمحمداقبال کلویابھی الیکشن کےعمل کوخراب کرنےمیں براہ راست ملوث تھےاوراس مقصدکیلئےوہ اسسٹنٹ کمشنرڈسکہ اورڈسٹرکٹ ایجوکیشن افسرفرخندہ یاسمین کےگھرہونےوالےاجلاسوں میں بھی شرکت کرتےرہے۔

ضمنی الیکشن میں دھاندلی کیلئےہونےوالےاجلاسوں میں وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارکی اس وقت کی معاون خصوصی ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان ، وزیراعلیٰ کےڈپٹی سیکرٹری علی عباس اورکچھ دوسرےلوگ بھی موجودہوتےتھے۔

رپورٹ کےمطابق ڈپٹی ڈائریکٹرکالجزمحمداقبال کلویانےغیرقانونی طورپرپریزائیڈنگ افسران کوگورنمننٹ ڈگری کالج بوائزکےپرنسپل نوازچیمہ کےدفترمیں بلوایااوران سےکہاکہ وہ ڈسکہ سٹی کےعلاقوں میں ووٹنگ کےعمل کوسست کردیں اورشہری علاقوں میں ٹرن آوٹ25فیصدسےزیادہ نہیں ہوناچاہیے۔

پریزائیڈنگ افسران سےیہ بھی کہاگیاکہ وہ ضلعی انتظامیہ اورپولیس کےکام میں کوئی مداخلت نہ کریں اورانہیں جووہ کرتےہیں کرنےدیاجائے۔

رپورٹ کےمطابق پولیس اوردیگرسرکاری حکام پولنگ اسٹاف اورپولنگ کےسامان کوتحفظ دینےمیں مکمل ناکام رہے۔ رپورٹ نےضمنی الیکشن کےدوران پولیس کےگھناونےاورانتہائی مشکوک کردارپربھی سنجیدہ سوالات اٹھائےہیں۔

انکوائری رپورٹ میں لکھاگیاہےکہ تحقیقات کےدوران متعددبیانات کےتجزئیےسےایسالگتاہےکہ پولیس والےیاتوکسی کےاثرمیں تھےیابھرانہوں نےجان بوجھ کروہ سب کچھ ہونےدیاجوان کےاردگردہورہاتھا۔

رپورٹ میں مزیدکہاگیاہےکہ واقعاتی شہادتوں ، کچھ پریزائیڈنگ افسران ، زیادہ ترڈرائیورز،چندپولیس افسران کےبیانات اورموبائل فون کال ریکارڈسےپتاچلتاہےکہ ضمنی الیکشن والےروزپریزائیڈنگ افسران کسی طےشدہ منصوبےکےتحت نجی گاڑیوں میں اپنے اپنےپولنگ اسٹیشنوں سےروانہ ہوئےاورراستےمیں وہ قلعہ کالروالاپولیس اسٹیشن اورپھرڈی ایس پی پسرورکےدفترمیں رکے۔

پریزائیڈنگ افسران شہاب پورہ/اگوکی روڈپرزہرہ ہسپتال کےقریب ایک نامعلوم بلڈنگ میں7گھنٹےتک رکے۔ پریزائیڈنگ افسران کےبیانات کےمطابق اس عمارت میں ان سےکہاگیاکہ وہ حکومتی امیدوارکی حمایت کریں۔ اس دوران ایک خاتون پریزائیڈنگ افسرسےبدتمیزی بھی کی گئی۔ اس کےبعدوہ پولیس سکیورٹی میں آراوآفس جیسروالاروانہ ہوئے۔

انکوائری کےدوران آراوآفس سےپولنگ اسٹیشن اورپھرواپس آنےکےطےشدہ راستےکی جیومیپنگ سےپتاچلاکہ تمام 20پریزائیڈنگ افسران طےشدہ روٹ سےآراوآفس جانےکی بجائےسیالکوٹ پسرورروڈکی طرف گئے۔ سیالکوٹ پہنچ کروہ زہرہ ہسپتال کےقریب ایک مشکوک جگہ پرکچھ گھنٹوں کیلئےرکےاورپھر20فروری کی صبح 4بجےآراوآفس کی طرف روانہ ہوئے۔

انکوائری رپورٹ سےثابت ہوتاہےکہ پریزائیڈنگ افسران نےمحکمہ تعلیم کےکچھ افسران سےملکرصاف ، شفاف الیکشن کےعمل کوخراب کیااورممکنہ طورپرانہوں نےایسامالی فوائدکیلئےکیا۔

انکوائری رپورٹ کےمطابق آراواورڈپٹی آراوکوالیکشن میں دھاندلی کاذمہ دارقراردیاگیاہےاورسفارش کی گئی ہےکہ آئندہ ان افسران کوانتظامی پوسٹ نہ دی جائےاورانتخابی عمل سےدوررکھاجائے۔

سی ای اوایجوکیشن سیالکوت مقبول احمدشاکربھی اپنی ذمہ داری پوری کرنےمیں ناکام رہے،انکےخلاف کارروائی کی سفارش کی گئی ہے۔

ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افسرفرخندہ یاسمین کےخلاف سخت محکمانہ اورفوجداری ایکشن کی ہدایت کی گئی ہے۔

انکوائری رپورٹ میں بیس پولنگ اسٹیشنوں پرتعینات پولیس اہلکاروں کےخلاف بھی کارروائی کی سفارش کی گئی ہے۔

یہ بھی چیک کریں

corruption index

پاکستان میں کرپشن بڑھ گئی،ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل

ویب ڈیسک ۔۔ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے کرپشن پر سال 2021ء کی رپورٹ جاری کردی جس …