Home / ڈپٹی اسپیکرکی رولنگ میں بظاہرکوئی شواہدنہیں،صرف الزامات ہیں: چیف جسٹس

ڈپٹی اسپیکرکی رولنگ میں بظاہرکوئی شواہدنہیں،صرف الزامات ہیں: چیف جسٹس

SC takes suo moto notice of NA dissolution

مانیٹرنگ ڈیسک ۔۔ ڈپٹی اسپیکرقومی اسمبلی کی رولنگ کےازخودنوٹس کی سماعت کےدوران پانچ رکنی لارجربنچ کےسربراہ چیف جسٹس عمرعطابندیال کےاہم ریمارکس ۔ کہابظاہر عدم اعتماد کی تحریک کامیاب ہونے جا رہی تھی، لیکن جس دن ووٹنگ ہونا تھی اس دن رولنگ آ گئی۔

بدھ کےروزہونےوالی سماعت کےدوران چیف جسٹس نےکیس کی سماعت طویل ہونےکی وجہ بھی بیان کردی۔ کہاکہ عدالت پرالزام لگایاجارہاہےکہ وہ فیصلہ جلدنہیں کررہی، بہت اہم کیس سن رہےہیں یکطرفہ فیصلہ کیسےدےسکتےہیں؟ سیاسی طورپرمسئلےکوحل کرنےکی کوشش کریں۔

دوران سماعت چیف جسٹس نےنیشنل سیکورٹی کونسل اجلاس کے منٹس بارےاستفسارکیاکہ وہ کدھر ہیں؟

ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ بارےچیف جسٹس کاکہناتھاکہ بظاہرڈپٹی اسپیکرکی رولنگ میں صرف الزامات ہیں کوئی فائنڈنگ نہیں، کیااسپیکرحقائق سامنےلائے بغیراس طرح کی رولنگ دے سکتاہے؟ یہی آئینی نقطہ ہےجس پرعدالت نےفیصلہ دینا ہے۔

کیا اسپیکر آرٹیکل 95 سے باہر جا کر ایسی رولنگ دے سکتا ہے جو ایجنڈے پر نہیں، ڈپٹی اسپیکر نے رولنگ میں نتیجہ اخذ کیا ہے۔ ہم نے یہ دیکھنا ہے کہ کیا اسپیکر کو اختیار ہے کہ وہ ہاؤس میں ایجنڈے سے ہٹ کرکوئی فیصلہ دےسکے؟ فیصلہ کرنے سے پہلے جاننا چاہتے ہیں کہ سازش کیا ہے جس کی بنیاد پررولنگ دی گئی۔

چیف جسٹس نے پوچھا کہ پارلیمنٹ آئین کی خلاف ورزی کرے کیا تب بھی مداخلت نہیں ہو سکتی؟ صدرمملکت کےوکیل بیرسٹرعلی ظفر نے جواب دیا کہ عدالت کو سپیکر کی رولنگ کا جائزہ لینے کا اختیار نہیں ہے۔

جسٹس جمال خان نے پوچھا کہ اسپیکر کی رولنگ کو کیسے ختم کیا جا سکتا ہے؟ وکیل علی ظفر نے جواب دیا کہ اسپیکر کی رولنگ کو ہاؤس ختم کر سکتا ہے۔

کیس کی سماعت جمعرات کی صبح ساڑھے9بجےشروع ہوگی۔

یہ بھی چیک کریں

Maryam Nawaz acquittal in Avenfield reference

ایون فیلڈریفرنس ختم ۔۔ مریم نوازبری

مانیٹرنگ ڈیسک ۔۔ مسلم لیگ ن کیلئےبڑاریلیف ۔ اسلام آبادہائیکورٹ نےایون فیلڈریفرنس میں مریم نوازاوران …