Home / سعودی شہریوں،غیرملکیوں پرسخت کوروناپابندیاں نافذ

سعودی شہریوں،غیرملکیوں پرسخت کوروناپابندیاں نافذ

Strict corona restrictions imposed in Saudi Arab

ویب ڈیسک کے ذریعے۔۔ سعودی حکام نے مملکت میں کوروناکے پھیلاؤ کو روکنے کی کوشش میں جمعرات کو شہریوں اور زائرین دونوں کےلیےنئی سفری پابندیوں کااعلان کیاہے۔

عرب نیوزکی رپورٹ کےمطابق 9 فروری سے، ملک سے باہر سفر کرنے کے خواہشمند سعودی شہریوں کو صرف اسی صورت میں ایسا کرنے کی اجازت دی جائے گی جب انہیں کورونا ویکسین کی تیسری خوراک یا بوسٹرڈوزلگ چکی ہوہو۔

بوسٹر ویکسینیشن اسےلگائی جائےگی جس شخص کو اپنی دوسری ویکسینیشن کے بعد کم از کم تین مہینےگزرچکےہوں۔ یہ نیا اصول 16 سال سے کم عمر کے بچوں یا توکلنا کی شرائط کےتحت خارج کیے گئے دیگر افراد پر لاگو نہیں ہوتا ہے۔

مملکت میں داخلے کی خواہش رکھنے والا کوئی بھی شخص، بشمول شہری اورحفاظتی ٹیکوں کےلگےہونےکےباوجود،48 گھنٹوں کے اندر منفی پی سی آ یا اینٹیجن ٹیسٹ کا نتیجہ فراہم کرنا ہوگا۔ آٹھ سال سے کم عمر کے بچے اس شرط سے مستثنیٰ ہیں۔

کوروناپابندیاں: امریکاآنےوالوں کوچھوٹ دینےکامطالبہ

وزارت نے کہا کہ سعودی شہری جو آمد سے پہلے مثبت ہیں لیکن ویکسین کی منظور شدہ تعداد حاصل کر چکے ہیں، انہیں مثبت نمونہ فراہم کرنے کے بعد سات دن تک ملک سے باہر رہنا پڑے گا۔ جن مریضوں کو ان کی تمام خوراکیں نہیں ملی ہیں انہیں واپس آنے کی اجازت دینے سے پہلے 10 دن انتظار کرنا پڑے گا۔

وزارت داخلہ نے اس بات کا اعادہ کیا کہ جو لوگ عوام میں فیس ماسک پہننے سے انکار کرتے ہیں انہیں 100000سعودی ریال($26,600) تک کے جرمانے کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ پہلی بارجرم کے لیے 1,000 جرمانہ ہے لیکن اس کے بعد کی ہرخلاف ورزی کے لیے زیادہ سے زیادہ رقم تک دوگنا ہو جاتی ہے۔

سعودی شہریوں کیلئےامریکاکابڑاعلان

وزارت نے کہا کہ جو لوگ قرنطینہ قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہیں انہیں دو سال تک قید اور 200,000 ریال جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے۔ قوانین کی خلاف ورزی کرنے والےغیرملکیوں کو ملک بدر کر دیا جائے گا اور مملکت میں واپس آنے پر پابندی عائد کر دی جائے گی۔

یہ بھی چیک کریں

Tata Sons ex chairman dies in road accident

معروف بھارتی بزنس مین حادثےمیں ہلاک

ویب ڈیسک ۔۔ بھارت کےبڑےکاروباری خاندان کےچشم وچراغ اورملک کی معروف کمپنی ٹاٹا سنزکے سابق …