Home / بھارتی عوام نےمودی کومستردکردیا

بھارتی عوام نےمودی کومستردکردیا

Narindra Modi PM India

ویب ڈیسک ۔۔ بھارت کی 5 ریاستوں مغربی بنگال، تامل ناڈو، کیرالا،آسام اورپڈوچیری کےقانون سازیعنی ودھان اسمبلی کےانتخابات میں مودی کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کو 3 ریاستوں میں منہ کی کھاناپڑی جبکہ بقیہ دو ریاستوں میں انتخابی اتحادکی وجہ سےبمشکل جیت حاصل کرپائی۔

بھارتی میڈیاکےذریعےسامنےآنےوالی رپورٹس کے مطابق 5 ریاستوں کی قانون ساز اسمبلی (ودھان) کےالیکشن کےاب تک سامنےآنےوالے نتائج کےمطابق مغربی بنگال میں ممتا بینرجی کی جماعت ترنمول کانگریس، تامل ناڈو میں درا ویدیئن پروگریسیو فیڈریشن، کیرالہ میں لیفٹ ڈیموکریٹک فرنٹ جب کہ آسام اور پڈوچیری میں بی جے پی کی سربراہی میں بننےوالے’نیشنل ڈیموکریٹک الائنس‘نامی اتحاد نےجیت حاصل کی۔

ودھان اسمبلی کےالیکشن میں سب سے اہم مغربی بنگال کا تھا جہاں 292 نشستوں میں 185 پر وزیراعلیٰ ممتا بنرجی کی جماعت ترنمول کانگریس نے کامیابی حاصل کرکے مودی کوچاروں خانےچت کردیا۔ یہاں بی جے پی 104 نشستیں جیت کر دوسرے نمبر پر رہی۔

دوسرا بڑا انتخابی مقابلہ تامل ناڈوکاتھاجہاں جہاں 234 میں سے 138 نشستوں پر ’’ڈی ایم کے‘‘فتح پائی اور اپوزیشن جماعت نے 92 نشستوں پر کامیابی حاصل کی۔ اس ریاست میں بی جے پی نہ ہونے کے برابر ہے۔

اسی طرح کیرالہ میں 140 نشستوں میں سےبائیں بازو کی جماعت لیفٹ ڈیموکریٹک فیڈریشن81نشستیں جیت کرپہلےنمبرپررہی۔ یونائیٹڈ ڈیموکریٹک پارٹی کو 50 نشستیں مل سکیں۔ یہاں بی جے پی کے 30 سے زائد سیاسی جماعتوں کے انتخابی اتحادکےحصےمیں صرف 3 نشستیں ہی آسکیں۔

آسام میں بی جے پی کے انتخابی اتحاد نیشنل ڈیموکریٹک الائنس نے 77 نشستوں پر کامیابی حاصل کی جب کہ یونائیٹڈ پروگریسیو الائنس نے اڑتالیس سیٹیں اپنے نام کیں اسی طرح پڈوچیری میں 30 میں 17 نشستیں مودی کے اتحاد اور 11 یونائٹڈ پروگریسیو الائنس نے حاصل کیں۔

یہ بھی چیک کریں

twitter miltdown

ٹویٹرمیں خوف وہراس کاماحول

ویب ڈیسک ۔۔ مفتوحہ علاقےمیں داخل ہونےوالےکسی فاتح کی طرح ایلون مسک کےٹویٹرکےسربراہ کاعہدہ سنبھالتےہی …