کورونا وائرس
پاکستان میں
مصدقہ کیسز
(+92 ) 1,529,988
اموات
() 30,379
صحتیاب مریض
1,496,123
فعال کیسز
3,486
Last updated: مئی 26, 2022 - 5:57 صبح (+05:00) دوسرے ممالک
Home / کیاشہبازشریف ان چیلنجوں پرقابوپالیں گے؟

کیاشہبازشریف ان چیلنجوں پرقابوپالیں گے؟

Challenges before Shahbaz Sharif Gvovt

وزیراعظم شہبازشریف اوران کی نئی نویلی حکومت کےسامنےدودھاری تلوارہے۔ انہیں جہاں اپنی کارکردگی بہتردکھانی ہےوہیں گزشتہ حکومت کی پھیلائی گندگی کوبھی صاف کرناہے۔ عمران خان کی حکومت جاتےجاتےشہبازشریف حکومت کےکرنےکیلئےاچھاخاصاکام چھوڑکرگئی ہے۔ اقتصادی بحران ہو، بڑھتی ہوئی سیاس افراتفری ہو، خارجہ محاذکےچیلنجزہوں یاملک کےکچھ علاقوں میں پھرسےزورپکڑتی دہشت گردی ، شہبازشریف کوان سب محاذوں پرصورتحال کودرست ڈگرپرلانےکیلئےواقعی پاکستان سپیڈسےکام کرناہوگا،کیونکہ صرف اچھی کارکردگی سےہی وہ عوام کےسامنےگزشتہ حکومت کی بری کارکردگی کوثابت کرسکتےہیں۔

ایک سوال جوسیاسی تجزیہ کاربارباراٹھارہےہیں یہ ہےکہ اس متحدہ حکومت میں شامل جماعتیں کیااگلےانتخابات تک اکٹھی رہ سکیں گی؟اس سوال کافی الحال توکوئی جواب نہیں دیاجاسکتالیکن اس حوالےسےلوگوں کےتحفظات بہرحال اپنی جگہ موجودہیں۔ اس کےعلاوہ ایک اوربات جواس نوواردحکومت کیلئےباعث تشویش ہےوہ ہےعمران خان کاایک بارپھرکنٹینرپرچڑھ جانا۔ ظاہرہےحکومت سےفراغت اورقومی اسمبلی سےاستعفوں کےبعدعمران خان فوری الیکشن کیلئےاس حکومت پرپبلک پریشربڑھائیں گےاوریوں ہم کہہ سکتےہیں کہ شہبازشریف کیلئےحکومت کرناآسان کام ثابت نہیں ہوگا۔

شہبازشریف کےسامنےبلامغالغہ سب سےبڑاچیلنج گزشتہ حکومت کےدورمیں وینٹی لیٹرپرجانےوالی بیمارمعیشت کواس کےپیروں پرکھڑاکرناہے۔ اس میں شک نہیں کہ تحریک انصاف کو5فیصدشرح نموکےساتھ ترقی پزیرمعیشت ملی جسےانہوں نےبسترمرگ پرپہنچادیا۔ آج عوام جان لیوامہنگائی کی چکی میں پسنےپرمجبورہیں۔ اس کےعلاوہ کوروناکےباعث ملک میں بڑھنےوالی بیروزگاری بھی کسی دردسرسےکم نہیں۔

روس یوکرین جنگ کےبعدعالمی سطح پرہونےوالی مہنگائی کےملکی معیشت پراثرات اوربڑھتی ہوئی تیل کی قیمتیں شہبازحکومت کیلئےبڑاچیلنج ثابت ہونگی ۔

اقتصادی محاذپراس حکومت کاسب سےبڑاامتحان آئی ایم ایف سےقرضےکی نئی قسط کاحصول ہےاورظاہرہےایساامریکااوردوسری مغربی طاقتوں کی آشیربادکےبغیرممکن نہیں ہوگا۔ یہاں یہ کہنےکی ضرورت نہیں کہ اگرآئی ایم ایف کےقرض کےبدلےملک میں مہنگائی کاجن مزیدبےقابوہوتاہےتولوگ گزشتہ حکومت کونہیں اسی حکومت کوبھلابراکہیں گے۔

وزیراعظم بنتےہی شہبازشریف نےعوام کوریلیف دینےکیلئےپنشن اورتنخواہوں میں دس فیصداضافےکےعلاوہ جن اقدامات کااعلان کیاہےوہ اچھےسہی مگرکافی نہیں ۔ مہنگائی کےمارےعوام کوہوش میں لانےکیلئےبہت کچھ کرناہوگااوریہ بہت کچھ کرنےکیلئےشہبازشریف حکومت کےپاس وقت بہت کم ہے۔

سیاسی پنڈتوں کاکہناہےکہ ملک کی اقتصادی حالت کےپیش نظرسخت اورغیرمقبول فیصلوں کی ضرورت ہےاورایساایک منتخب اورعوامی مینڈیٹ کی حامل حکومت ہی کرسکتی ہے۔ اس لئےبہترہوگاکہ موجودہ حکومت جلدسےجلدانتخابی اصلاحات کوحتمی شکل دےاورنئےانتخابات کی جانب جائےکیونکہ ایساکرناملک کی سیاسی و معاشی حالت کوبہتربنانےکیلئےاچھاہوگا۔

دوسری جانب مسلم لیگ ن کےرہنماشاہدخاقان عباسی کاکہناہےکہ یہ حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرےگی ۔ ایک اوراہم بات یہ ہےکہ الیکشن کمیشن پہلےہی عدالت عظمی کویہ کہہ چکاہےکہ 7ماہ سےپہلےعام انتخابات کراناممکن نہیں ہوگا۔

بہرحال متحدہ اپوزیشن عمران خان حکومت کونکالنےمیں کامیاب توہوئی ہےلیکن پاکستان کےموجودہ حالات کوسامنےرکھتےہوئےحکومت پھولوں کی سیج نہیں بلکہ کانٹوں کابسترثابت ہوگی۔

About Zaheer Ahmad

Muhammad Zaheer Ahmad is a senior journalist with a career spanning over 20 years in print and electronic media. He started from the Urdu language Daily Din, proceeding to Daily Times, where he stayed as sub-editor for 2 years. In 2008, he joined broadcast journalism as a Producer at the English language Express 24/7, and later to its major subsidiary, Express-News. Zaheer currently works there as a Senior News Producer. He is also the Managing Editor of newsmakers.com.pk. Zaheer can be reached at [email protected]

یہ بھی چیک کریں

PM Imran Khan has no Trump Card

تحریک عدم اعتماد: کیاہونےجارہاہے؟

وزیراعظم عمران خان کےخلاف تحریک عدم اعتمادکااونٹ کس کروٹ بیٹھےگا؟اس سوال کادرست جواب دینااس وقت …