Home / وزیراعظم شہبازشریف کےدبنگ اعلانات

وزیراعظم شہبازشریف کےدبنگ اعلانات

shahbaz sharif PM speech

ویب ڈیسک ۔۔ مسلم لیگ ن کے صدرشہبازشریف نےملک کے23ویں وزیراعظم کی حیثیت سےحلف اٹھالیا۔ چئیرمین سینیٹ صادق سنجرانی نےشہبازشریف سےحلف لیا۔ روایت کےمطابق وزیراعظم سےحلف صدرمملکت لیتےہیں لیکن صدرعارف علوی علالت کےباعث مختصرچھٹی پرچلےگئےاوران کی غیرموجودگی میں قائم مقام صدرصادق سنجرانی نےان سےحلف لیا۔

اس سےپہلےقومی اسمبلی نےاکثریت رائےسےشہباز شریف کو نیا قائد ایوان منتخب کیا۔ شہبازشریف کو174ووٹ ملےاوران کےمخالف تحریک انصاف کےشاہ محمودقریشی کوکوئی ووٹ نہیں ملاکیونکہ ان کےتمام ارکان قائدایوان کےانتخاب کےدوران ایوان سےچلےگئےتھے،تحریک انصاف نےنہ صرف قائدایوان کےانتخاب کابائیکاٹ کیابلکہ قومی اسمبلی سےمستعفی ہونےکااعلان بھی کیا۔

خیال رہےکہ نئے قائد ایوان کے لیے متحدہ اپوزیشن کی جانب سے شہباز شریف اور تحریک انصاف کی جانب سے شاہ محمود قریشی وزیراعظم کے امیدوار تھے تاہم پی ٹی آئی کی جانب سے بائیکاٹ کے بعد شہباز شریف واحد امیدوار رہ گئے۔

قومی اسمبلی میں قائدایوان یعنی وزیراعظم منتخب ہونےکےبعدخطاب کرتےہوئےشہبازشریف نےچنداہم اعلانات کئے۔

مبینہ دھمکی آمیزخط کی تحقیقات کااعلان

بطورنومنتخب وزیراعظم قومی اسمبلی میں اپنےپہلےخطاب میں شہبازشریف نےخاص طورپراس خط کاذکرکیاجوبقول سابق وزیراعظم عمران خان امریکامیں پاکستان کےسفیراسدمجیدخان نےبھیجااورجس میں پاکستان میں عمران خان حکومت کی تبدیلی کیلئےسازش کرنےکاذکرہے۔

شہبازشریف نےاعلان کیاکہ وہ پارلیمان کی قومی سلامتی کمیٹی کااجلاس بلاکرملک کی عسکری قیادت سےکہیں گےکہ ان کیمرہ سیشن میں ارکان پارلیمنٹ کواس خط کےمتعلق بریفنگ دےاوربتائےکہ سچ کیاہےتاکہ دنیاکےسامنےاس خط کی حقیقت آجائے۔ شہبازشریف نےکہاکہ اگرثابت ہوجائےانہوں نےکوئی سازش کی ہےتووہ استعفیٰ دیکرگھرچلےجائیں گے۔

شہباز شریف نے کہا کہ کئی دنوں سے ڈرامہ چل رہا ہے کہ حکومت گرانے کے لیے غیر ملکی خط آیا، نہ میں نے خط دیکھا نہ کسی نے دکھایا، جاننا چاہتے ہیں کہ یہ حقیقت ہے یا جھوٹ، یہ سب پارلیمان کے سامنے آنا چاہیے جس کے لیے پارلیمنٹ کی سلامتی کمیٹی کا اجلاس بلایا جائے جس میں ان کیمرا بریفنگ دی جائے، تمام مسلح افواج کے سربراہان، ڈی جی آئی ایس آئی موجود ہوں اور انہیں بریفنگ دی جائے تاکہ پوری قوم کو خط کی حقیقت پتا چلے۔

معاشی اعشاریوں میں بہتری

شہبازشریف کاکہناتھاکہ عمران حکومت کےجاتےہی پاکستان میں سٹاک ایکسچینج نےریکارڈترقی کی اورآج پاکستان میں روپیہ ڈالر کے مقابلے میں آٹھ روپیہ اوپر گیااور182 روپے پر آگیا۔

پی ٹی آئی حکومت پرتنقید

شہباز شریف نےاپنےخطاب میں تحریک انصاف حکومت کی معاشی پرفارمنس کاذکرکرتےہوئے کہا کہ ان پونے چار سال میں پی ٹی آئی حکومت نے ہوش ربا قرضے لیے اور اس کے باوجود کہیں ایک اینٹ بھی نہیں لگائی، بے پناہ مہنگائی ہوگئی، اشیائے خورد و نوش کی قیمتیں آسمان پر پہنچ گئی، کسان پریشان ہوگیا، لاکھوں مزدور بے روزگار ہوئے، 74 سالہ تاریخ میں پہلی بار بدترین تجارتی خسارہ ہونے جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 71 سال میں مجموعی طور پر 25 ہزار ارب روپے قرضہ لیا گیا جب کہ عمران نیازی نے ساڑھے 3 سال میں 20ہزار ارب روپے قرضہ لیا۔

کم از کم اجرت 25 ہزار روپے کرنے کا اعلان

وزیراعظم شہبازشریف نے ملک بھر میں کم از کم ماہانہ اجرت 25 ہزار روپے کرنے کا اعلان کردیا، تنخواہوں میں اضافے کا اطلاق یکم اپریل سے ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وہ سرکاری ملازمین کی جن تنخواہ ایک لاکھ روپے ماہانہ ہے ان کی تنخواہ بھی دس فیصد بڑھائی جارہی ہے۔

پنشن میں 10 فیصد اضافے کا اعلان

وزیراعظم نے اس کے ساتھ ہی پنشن بھی 10 فیصد بڑھانے کا اعلان کیا اور کہا کہ اس کا اطلاق بھی یکم اپریل سے ہوگا۔

لیپ ٹاپ اور بے نظیر کارڈ اسکیم دوبارہ لانےکااعلان

وزیراعظم نے نوجوان طلبہ کو دوبارہ لیپ ٹاپ دینے اور بے نظیر کارڈ کو دوبارہ لانے کا بھی اعلان کیا۔ انہوں نے چاروں صوبوں کی یکساں ترقی کا اعلان کیا اور یہ بھی کہا کہ رمضان کے باقی دنوں میں ملک بھر میں سستا آٹا فراہم کریں گے۔

یہ بھی چیک کریں

Khawaja Asif Claims on Imran Khan

عمران خان اسٹیبلشمنٹ سےصلح چاہتےہیں،خواجہ آصف

مانیٹرنگ ڈیسک ۔۔ عمران خان کےموجودہ آرمی چیف کوتوسیع دینےکےبیان پرتبصرہ کرتےہوئےوزیرخواجہ آصف نےکہاکہ عمران …