News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
374173
  • اموات 7662
  • سندھ 162227
  • پنجاب 114010
  • بلوچستان 16744
  • خیبرپختونخوا 44097
  • اسلام آباد 26569
  • گلگت بلتستان 4526
  • آزاد کشمیر 6000

 

عمران خان نےرائٹ اوررانگ کی سیاست کی بنیادڈالی ، شبلی فراز

عمران خان نےرائٹ اوررانگ کی سیاست کی بنیادڈالی ، شبلی فراز
اپ لوڈ :- منگل 18 اگست 2020
ٹوٹل ریڈز :- 62

 ویب ڈیسک ، مانیٹرنگ ڈیسک
 
حکومت کی دوسالہ کارکردگی کی رپورٹ پیش کرتےہوئےوفاقی وزیراطلاعات شبلی فرازکہتےہیں وزیراعظم عمران خان نےملک میں رائٹ اورلیفٹ کی سیاست ختم کرکےرائٹ اوررانگ کی سیاست شروع کی ۔ احتساب، انصاف، میرٹ اور پسماندہ طبقے کی ترقی وزیراعظم عمران خان کا وژن ہے۔ہمارےدشمن ملک میں افراتفری اورمایوسی پھیلاناچاہتےہیں۔
 
شبلی فراز نےوفاقی وزراء کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سیاست کا مقصد فلاحی ریاست کا قیام ہے ، وہ ایسی حکومت بنانا چاہتے ہیں جہاں عوام کی خدمت ہو،وزیراعظم کی یہی سوچ ہے کہ ملک کوآگے بڑھایا جائے۔
 
شبلی فراز کا کہنا تھا پاکستانی عوام نے سیاست کوپیشہ بنانےوالوں کو مسترد کر دیا ہے، دشمن قوتیں ففتھ جنریشن وار میں نا امیدی اور مایوسی پیدا کرنا چاہتے ہیں ۔ 
 
اس موقع پروزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنی وزارت کی کارکردگی کے حوالے سے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں بھارت کی پاکستان کوتنہاکرنےکی عالمی سازشوں کوناکام بنادیا بھارت کی ہمیشہ یہ کوشش رہی کہ پاکستان کو سفارتی محاذ پر تنہا کردے، ہمسایہ ممالک سے بہتر تعلقات قائم کئےجس کاواضح ثبوت ہےکہ بھارت کیخلاف چین، نیپال اور بنگلادیش کا ردعمل سامنےآیا۔ 
 
 افغانستان کی صورتحال پربات کرتےہوئے شاہ محمود قریشی کاکہناتھا کہ وزیراعظم عمران خان کہتے رہے افغانستان کا حل سیاسی ہے اورآج پوری دنیا افغانستان کے سیاسی حل کی بات کررہی ہے۔ انہوں نے کہا جنوبی ایشیا کے تمام ممالک بھارت کی توسیع پسندانہ سوچ کاسےتنگ ہیں، دنیا میں اسلامو فوبیا کی ہوا چل رہی ہےاور کورونا کی وجہ سے دنیا کا منظر نامہ بدل رہا ہے۔
 
شاہ محمود قریشی کےمطابق مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پروزیراعظم عمران خان نے اٹھایا، ایک سال میں 3 مرتبہ سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیر زیر بحث آیااوربھارت کو نہ چاہتے ہوئےبھی سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیرپربحث کاسامناکرناپڑا، عمران خان کی  گزشتہ برس اقوام متحدہ میں ہونےوالی تقریر کا سابقہ حکمرانوں سے موازنہ کر لیا جائے۔ ۔
 
مشیز خزانہ حفیظ شیخ نے اپنی کارکردگی پربات کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں لیے گئے قرض کے 5 ہزار ارب روپے واپس کیے، 20 ارب ڈالر خسارہ کو کم کر کے 3 ارب کیاگیا، حکومت نے برآمدات بڑھانے کیلئے مراعات دیں، ملکی تاریخ میں پہلی بار حکومت نے اخراجات میں کمی کی، صدر اور وزیراعظم ہاؤس کے فنڈز کم کیے گئے،کسی ادارے، کسی وزارت کو سپلیمنٹری گرانٹ نہیں دی۔
 
حفیظ شیخ نےبتایاکورونا کی وجہ سے ٹیکس ریونیو متاثر ہوا، کورونا سے پہلے ٹیکس بڑھنے کی سطح 17 فیصد تھی، کورونا وائرس کے دوران ایک ہزار 240 ارب کا پیکج دیا، رواں سال سٹیٹ بینک سے کوئی قرض نہیں لیا، ٹیکسز کے نظام کو بہتر کرنے کی کوشش کی، حکومت نے بلاتعصب ایک کروڑ 60 لاکھ پاکستانیوں کو امداد دی، ملکی تاریخ میں پہلی بار 250 ارب روپے لوگوں کو دیئے گئے، کورونا سے بے روزگار ہونیوالوں کو نقد امداد دی گئی۔

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.