News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
374173
  • اموات 7662
  • سندھ 162227
  • پنجاب 114010
  • بلوچستان 16744
  • خیبرپختونخوا 44097
  • اسلام آباد 26569
  • گلگت بلتستان 4526
  • آزاد کشمیر 6000

 

بانوقدسیہ کی آج 92ویں سالگرہ ۔۔ گوگل کابانوآپاکوخراج عقیدت

بانوقدسیہ کی آج 92ویں سالگرہ ۔۔ گوگل کابانوآپاکوخراج عقیدت
اپ لوڈ :- ہفتہ 28 نومبر 2020
ٹوٹل ریڈز :- 67

پاکستان کی شہرہ آفاق ناول نگار، ڈراما نویس و افسانہ نگار بانو قُدسیہ کی آج 92ویں سالگرہ ہے۔ بانوقدسیہ کوخراج عقیدت پیش کرتےہوئےسرچ انجن گوگل نےاپنےڈوڈل پربانوآپاکی تصویرسجائی ہے۔ 
 
گوگل نے بانو قُدسیہ کا ڈوڈل 28 نومبر کا آغاز ہوتے ہی جاری کردیا تھا، جس میں شہرہ آفاق ناول نگار و ڈراما ساز کو ان کے روایتی لباس و اندازمیں دکھایا گیا ہے۔
 
بانو قُدسیہ متحدہ ہندوستان میں 28 نومبر 1928 کو پنجاب کے شہر فیروزپور میں پیدا ہوئی تھیں لیکن پاکستان بننےکےبعد وہ اپنے اہل خانہ کے ہمراہ پاکستان منتقل ہوئی تھیں اور انہوں نے زندگی کے باقی ایام لاہور میں بسرکئے۔
 
اردو ادب کو معروف ناول اور افسانے دینے والی بانو قُدسیہ نے کم عمری میں ہی لکھنا شروع کردیا تھا اور انہوں نے معروف ادیب، ناول نویس و افسانہ نگار اشفاق احمد سے شادی کی تھی۔
 
بانو قُدسیہ اور اشفاق احمد کی جوڑی کا شمار ادبی دنیا کی معتبر ترین جوڑیوں میں ہوتا تھا اور دونوں نے اردو ادب کوشہرہ آفاق اور لازوال کتابیں دیں۔
 
بانو قُدسیہ نے مجموعی طور پر 30 سے زائد ناول اردو ادب کو دیے جن میں راجہ گدھ، ایک دن شہرِ بے مثال، توجہ کی طالب، حوّا کے نام، مردِ ابریشم، موم کی گلیاں، تماثیل، آتش زیرپاء سمیت دیگر شامل ہیں۔
 
انہیں لوگ پیار و ادب سے بانو آپا بھی بلاتے تھے اور خیال کیا جاتا ہے کہ ان کی ہر تصنیف عورت کے گرد نہیں بلکہ عورت کی محبت کے گرد گھومتی ہے۔
 
بانو قدسیہ 4 اکتوبر 2017 کو اس دنیا سے رخصت ہوئیں، تاہم وہ اپنی تخلیقات و تصانیف کے ذریعے آج بھی مدحوں کے دلوں میں زندہ ہیں۔

ٹیگز

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.