News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
374173
  • اموات 7662
  • سندھ 162227
  • پنجاب 114010
  • بلوچستان 16744
  • خیبرپختونخوا 44097
  • اسلام آباد 26569
  • گلگت بلتستان 4526
  • آزاد کشمیر 6000

 

میرےپاس تم ہو: دانش مرانہیں بلکہ مرکرامرہوگیا۔۔

میرےپاس تم ہو: دانش مرانہیں بلکہ مرکرامرہوگیا۔۔
اپ لوڈ :- سوموار 27 جنوری 2020
ٹوٹل ریڈز :- 304

اےآروائی ڈیجیٹل کی بلاک بسٹرڈرامہ سیریل میرےپاس تم ہو کومصنف نےجس طرح ختم کیااس حوالےسےعام طورپردوآراپائی جاتی ہیں ۔ پہلی تویہ کہ خلیل الرحمان قمرعام طورپراپنےڈراموں کی آخری قسط میں سب سےمقبول کردارکومارڈالتےہیں ۔ میرےپاس تم ہومیں بھی انہوں نےاس ڈرامےکےسب سےمقبول کرداردانش کومارڈالا۔ اس ڈرامےکی آخری قسط کےحوالےسےدوسری رائےیہ پائی جاتی ہےکہ مصنف اگرچاہتےتواسےایک ہیپی اینڈنگ بھی دےسکتےتھےتاہم ناقدین کےخیال میں ہیپی اینڈنگ اگرہوتی تووہ ایک عام ساڈرامہ بن جاتا۔ اس لئےعام کوخاص بنانےکیلئےاسےایک ٹریجک موڑپرلاکرغیرروایتی اندازمیں ختم کرناضروری تھا۔
 
چلیں ہم ڈرامےکےاینڈپرکوئی بحث نہیں کرتے،ڈرامےکوآخرایک دن توختم ہوناہی تھا۔ لیکن قابل غوربات یہ ہےکہ ڈرامےسےہمیں سبق کیاملا؟میری دانست میں بظاہرتویہی سبق ملتاہےکہ دنیامیں بےوفامردہی نہیں عورتیں بھی ہوتی ہیں اور یہ کہ مرد اگربےوفائی کرےتوگھربچ سکتاہےلیکن اگرعورت بےوفائی کرےتوگھربربادہوجاتاہے۔
 
میرےپاس تم ہوکےمصنف خلیل الرحمان قمرنےڈرامےکےہیرودانش کوانتہائی نیک ، ایمانداراوربیوی سےوفادارشوہرکےروپ میں پیش کیاہے۔ یہی نہیں وہ ایک فرمانبرداربیٹابھی ہے،یہی وجہ ہےکہ اپنےمرحوم والدکی نصیحت پرعمل کرتےہوئےسرکاری افسرہونےکےباوجودرشوت نہیں لیتا۔ کہتاہےجب بھی ایساکرنےکاسوچتاہوں تواباخواب میں آجاتےہیں ۔
 
دوستو،فی زمانہ عملی زندگی میں تواکثرایساہوتاہےکہ ایمانداراوراچھےلوگ بھی بظاہربرےاوربےایمان لوگوں سےشکست کھاجاتےہیں اورہم ہرروزاس قسم کےواقعات اپنےاردگردرونماہوتےہوئےدیکھتےہیں لیکن عجیب بات ہےکہ ڈراموں اورفلموں میں ہم ایساہوتےہوئےنہیں دیکھناچاہتے۔ سکرین چھوٹی ہویابڑی  ۔۔ ہم ہرصورت ہیروکوولن سےجیتتےہوئےدیکھناچاہتےہیں ۔ ایسااس لئےہےکیونکہ فلم اورڈرامےکےذریعےہم نےمعاشرےکوایک مثبت سوچ اورپیغام دیناہوتاہےتاکہ بحیثیت مجموعی دیکھنےوالوں کےذہنوں پراچھےاثرات مرتب ہوں ۔ 
 
ایساہی ہےتوپھرمصنف نےاس ڈرامےمیں بیوی سےسچی اوربےلوث محبت کرنےوالےانسان کوکیوں ماردیا؟اس سوال کاجواب میری ناقص عقل کےمطابق تویہ بنتاہےکہ مصنف نےہیروکومارانہیں بلکہ مارکراسےاس کی سچی محبت اوروفاشعاری کاانعام دیاہے۔ حیران نہ ہوں ، میرامطلب ہےڈرامہ نگارنےدانش کومارکراسےامرکرنےکی کوشش کی ہے، یہ ثابت کرناچاہاہےکہ عورتیں ہی نہیں مردبھی محبت کی معراج کوپانےکی خاطرجان گنواسکتےہیں ۔ عام فہم اندازسےدیکھیں تودانش مرگیاحالانکہ حقیقت میں وہ مرانہیں بلکہ امرہوگیا۔ 
 
اس ڈرامےمیں ایک اورانتہائی قابل غوربات یہ ہےکہ رائٹرنےبڑی خوبصورتی سےانسانی کردارکی اہمیت پرروشنی ڈالی ہے۔ ڈرامےکی ہیروئن مہوش کاایک اچھی زندگی کی خواہش کرنا ، اچھےاچھےکپڑےاورزیورپہنناکوئی بری بات نہیں لیکن جب اس کےخوابوں کی دنیااسےایک غلط راستےسےملنےکی امیدنظرآئی تووہ کوئی کردارنہ دکھاسکی اورلالچ جیسی بری بلاکاشکارہوگئی ۔ یہاں مجھےڈرامےمیں بولےگئےمہوش کےڈائیلاگ یادآرہےہیں ۔ ایک موقع پردانش اس سےکہتاہے:تمہیں پاکرمجھےاللہ سےاورکچھ نہیں چاہئیے۔ جواب میں مہوش کہتی ہے: لیکن مجھےاللہ سےتمہارےعلاوہ بھی بہت کچھ چاہیے۔ اس ڈرامےکودیکھتےہوئےجانےکیوں مجھےنوےکی دہائی کی مشہورہالی وڈ فلم انڈیسنٹ پروپوزل آگئی جس میں مرکزی کردار معروف اداکارہ ڈیمی مورنےاداکیاتھا ۔ 
 
  بحیثیت معاشرہ ہمیں یہ سوچنےکی ضرورت ہےکہ زندگی میں وہ سب جوہمارےپاس نہیں ہے،کیااسےپانےکیلئےہم کسی بھی حدسےگزرجائیں گے؟ بہت گہرائی میں جاکریہ سوچنےاورسمجھنےکی ضرورت ہےکہ اگرمہوش شہوارکی پیشکش کوٹھکراکرایک وفاشعاربیوی ہونےکاثبوت دیتی توکیاوہ گھاٹےمیں رہتی ؟ یادکیجئےشہواراحمدنےاپنےگھرسےرخصت ہوتےوقت اپنی بیوی سےکیاکہا؟ کہا کہ سب کچھ مان لوں گا ، یہ نہیں مانوں گا کہ مہوش کومیں نےتباہ کیا ۔ اسےاس کی لالچ نےتباہ کیا ۔
یہ بھی پڑھیں۔۔
جاتےجاتےایک بات کہ انسان کی تمام خواہشیں پوری ہونےپرضروری نہیں کہ اس کیلئےخوشیوں کاباعث ہی بنیں ۔ اپنی بات کااختتام دانش کےایک خوبصورت ڈائیلاگ پرکرناچاہوں گا۔  
 
محبت کوئی سٹاک مارکیٹ نہیں، ایک باربھاوگرگیاتوگرگیا ۔۔

Muhammad Zaheer

The author is a journalist. He is currently working for a news channel.

Muhammad Zaheer مزید تحریریں

Muhammad Zaheer

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.