News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
374173
  • اموات 7662
  • سندھ 162227
  • پنجاب 114010
  • بلوچستان 16744
  • خیبرپختونخوا 44097
  • اسلام آباد 26569
  • گلگت بلتستان 4526
  • آزاد کشمیر 6000

 

مریم نوازنےبلاول سےمتعلق بڑی بات کہہ دی

مریم نوازنےبلاول سےمتعلق بڑی بات کہہ دی
اپ لوڈ :- جمعرات 31 دسمبر 2020
ٹوٹل ریڈز :- 63

ویب ڈیسک ۔۔ گزشتہ روزاسلام آبادمیں پی ڈی ایم سربراہ مولانافضل الرحمان اورمسلم لیگ ن کی رہنمامریم نوازکےدرمیان اہم ملاقات ہوئی ، جس میں پی ڈی ایم کےاگلےسیاسی لائحہ عمل اورموجودہ سیاسی صورتحال پرطویل مشاورت کی گئی ۔
 
واضح رہےکہ یہ ملاقات پیپلزپارٹی کےسینیٹ الیکشن میں حصہ لینےکےاعلان اورمسلم لیگ کےسینئررہنماخواجہ آصف کی نیب کےہاتھوں گرفتاری کےبعدہوئی ۔ 
 
ملاقات کےبعدمیڈیاسےبات کرتےہوئے مریم نوازکاکہناتھا بلاول بھٹو نے اپنی پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹوکمیٹی کےاجلاس کےبعدجو باتیں کی ہیں وہ اچھی ہیں کیونکہ انہوں نے کہا کہ سی ای سی میں جو سفارشات آئی ہیں وہ پی ڈی ایم کے سامنے رکھیں گے اور مشترکہ فیصلہ ہوگا تو ہم اجلاس میں ان کی باتوں پر بحث کریں گے اور پی ڈی ایم مشاورت سے فیصلہ کریں گے۔
 
انہوں نےکہا کہ مشاورت کےبعدجو سب کا فیصلہ ہوگاوہی ہم سب کا فیصلہ ہوگا۔ اس لیے پہلے سے قیاس آرائی کرنا مناسب نہیں ہے۔
 
اس موقع پربات کرتےہوئےمولانا فضل الرحمٰن نےکہا کہ پیپلز پارٹی کے گڑھی خدابخش جلسے میں جانے کا ہمارا کوئی پروگرام نہیں تھا اور نہ مجھے کوئی دعوت تھی۔
 
خواجہ آصف کی گرفتاری سے متعلق مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ 'خواجہ آصف کی گرفتاری انتقامی سیاست کا تسلسل ہے، ہم عملی طور پر ردعمل کے لیے مشاورت کریں گے، ایسا نہیں ہے کہ آرام سے لوگوں کو پکڑتے چلے جائیں اور ہم خاموش رہیں گے، ہم باقاعدہ مظاہرے اور احتجاج کو عملی شکل دینے کے لیے پی ڈی ایم کے سربراہی اجلاس میں تجاویز لے کر جائیں گے اور حکمت عملی وضع کریں گے۔
 
بلاول بھٹو کے ساتھ کھڑے ہونے سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ 'ہم اتنے عرصے تک اکٹھے رہے ہیں تو پھر شکوک کیوں پیدا کرنا چاہتے ہیں، میں کارساز میں ان کے ایونٹ اور ملتان میں ان کے جلسے اور یوم تاسیس میں شریک ہوسکتا ہوں تو بی بی کے حوالے سے جلسے میں کیوں شریک نہیں ہوسکتا؟  
 
مولانا فضل الرحمٰن نے گرفتاریوں سے متعلق کہا کہ 'یہ گرفتاریاں چھوٹی باتیں ہیں، ہم بڑے انقلاب کی طرف جانا چاہتے ہیں اور ان کے گریبان میں ہاتھ ڈالا ہوا ہے، وہ ہزار کہیں احتساب احتساب لیکن میں کہنا چاہتا ہوں کہ ان کا احتساب بے اثر ہوا ہے اور وہ ہمارے احتساب کے شکنجے میں ہیں اور وہ اپنے مستقبل کی فکر کریں۔

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.