News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
374173
  • اموات 7662
  • سندھ 162227
  • پنجاب 114010
  • بلوچستان 16744
  • خیبرپختونخوا 44097
  • اسلام آباد 26569
  • گلگت بلتستان 4526
  • آزاد کشمیر 6000

 

نوازشریف کاآخری داءوابھی باقی ہےدوست ۔۔

نوازشریف کاآخری داءوابھی باقی ہےدوست ۔۔
اپ لوڈ :- منگل 22 ستمبر 2020
ٹوٹل ریڈز :- 207

میدان جنگ میں موجودایک سپہ سالارکوبعض اوقات اپناآخری داءوسب سےپہلےکھیلناپڑجاتاہے۔ کبھی ایسامجبوری میں کرناپڑتاہےتوکبھی حکمت عملی کےتحت ۔ سابق وزیراعظم نوازشریف نےبھی 20ستمبرکواپوزیشن جماعتوں کی کل جماعتی کانفرنس سےاپنے"کھلےڈلے"خطاب میں اسٹیبلشمنٹ کےخلاف جدوجہدکااعلان کرکےیوں کہیں توغلط نہ ہوگاکہ اس لڑائی میں اپناآخری داوکھیل دیاہے۔ طارق بن زیادکی طرح انہوں نےبھی یہ سوچ کرکشتیاں جلادی ہیں کہ بس بہت ہوگیا،اب تخت ہوگایاتختہ ۔ 

نوازشریف کےبارےمیں بہت سےلوگوں کاخیال ہےکہ ان میں عقل سمجھ کی کمی ہےاوروہ اپنےاوپرخودہی خودکش حملہ کرکےسب کچھ تباہ کردیتےہیں ۔ اس کےبرعکس کچھ اورلوگوں کانوازشریف کےبارےمیں مانناہےکہ وہ خودمصیبتوں اورمشکلوں کودعوت دیتےہیں ، ان سےکھیلتےہیں اورپھربڑےآرام سےان مصیبتوں کےچنگل سےصاف بچ نکلتےہیں ۔ 

 اپوزیشن کی آل پارٹیزکانفرنس سےخطاب اوراس میں عمران خان کولانےوالوں کےخلاف جدوجہدکےاعلان پروفاقی وزیرشیخ رشیدنےاپنےردعمل کااظہارکرتےہوئےکہاکہ نوازشریف اب پاکستان واپس نہیں آئیں گےبلکہ لندن ہی میں سیاسی پناہ اختیارکرینگے۔ یعنی اتنی سخت بات کرکےنوازشریف کیلئےوطن واپس آناممکن نہیں ۔ 

شیخ رشیدکی بات مان لی جائےتوکیاواقعی نوازشریف نےایساداءوکھیل دیاہےجوالٹانہی پرچلنےوالاہے؟ توچلئےپھراس سوال کاجواب ڈھونڈنےکی کوشش کرتےہیں ۔ 

پاکستان کےسیاسی حالات پرگہری نظررکھنےاوراس کاتجزیہ کرنےوالےکچھ صاحب الرائےاورصائب الرائےلوگوں کےخیال میں نوازشریف نےاپنےخطاب میں اتنی سخت باتیں ایسےہی نہیں کردیں،انہوں نےیہ سب بہت سوچ بچاراورآنےوالےحالات کی مکمل کیلکولیشن کےبعدکیاہے۔ اندرکی بات جاننےوالےکہتےہیں کہ نوازشریف اب فیصلہ کن لڑائی کےموڈمیں ہیں اورآل پارٹیزمیں حکومت کےخلاف ہونےوالےفیصلےاسی لڑائی کی نشاندہی کرتےہیں ۔ اس لڑائی کا آغازجیساکہ ہم سب جانتےہیں کہ حکومت کےخلاف جلسے،جلوسوں اورریلیوں کی صورت میں ہوگااورجنوری میں اس لڑائی کافائنل راءونڈلانگ مارچ اوردھرنےکی صورت میں ہوگا ۔ 

فرض کرلیتےہیں کہ اپوزیشن جماعتیں بخیروخوبی لانگ مارچ اوردھرنےکےمرحلےتک پہنچ جاتی ہیں۔ دھرناکئی روزتک جاری رہتاہےلیکن عمران خان ٹس  سےمس نہیں ہوتےبلکہ الٹازیادہ شدت سےاپوزیشن کےخلاف انتقامی کارروائیوں پراترآتےہیں توکیاہوگا؟ 

 دھرنےاورلانگ مارچ کواس نکتہ عروج پرلاکرنوازشریف اپوزیشن کی دیگربڑی جماعتوں یعنی پیپلزپارٹی اورمولانافضل الرحمان کےساتھ ملکروہ داوکھیلیں گےجوبظاہرایسالگتاہےکہ اس حکومت کےپیروں تلےسےزمین کھینچ لےگا ۔ 

وہ داءویاآپشن ہوگا پارلیمنٹ کےتمام ایوانوں سےاجتماعی استعفے۔ قومی اسمبلی ، سینیٹ اورصوبائی اسمبلیوں میں موجوداپنےتمام اراکین کےاستعفوں کےبعدعملاً پارلیمنٹ ایک عضومعطل بنکررہ جائےگی اورمکمل طورپرغیرفعال ہوجائےگی اورایساہونےکی صورت میں مارچ میں ہونےوالےسینیٹ الیکشن بھی نہیں ہوسکیں گے۔ یوں عمران خان سینیٹ میں اپنی اکثریت لاکرمرضی کی قانون سازی کرکےزیادہ سےزیادہ طاقت حاصل کرنےکااپناخواب پوراکرنےکےقابل نہیں رہیں گے۔ 

تو، دوستویہ تھی حالات پرگہری نظررکھنےوالےچندسینئرصحافیوں کی رائےلیکن ذرادیرکورکئےاورسوچئےکہ اگراپوزیشن کادھرنااورلانگ مارچ ناکام ہوجاتاہےاوروہ اسمبلیوں سےمستعفی بھی نہیں ہوتی توکیاہوگا؟ اس صورت میں ظاہرہےعمران خان ایک انتہائی طاقتوروزیراعظم بنکرسامنےآئیں گےاوراپوزیشن  کی وہ چیخیں نکلوائیں گےجن کاکئی مرتبہ اظہارکرچکےہیں ۔ 

ٹیگز

Muhammad Zaheer

The author is a journalist. He is currently working for a news channel.

Muhammad Zaheer مزید تحریریں

Muhammad Zaheer

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.