News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
374173
  • اموات 7662
  • سندھ 162227
  • پنجاب 114010
  • بلوچستان 16744
  • خیبرپختونخوا 44097
  • اسلام آباد 26569
  • گلگت بلتستان 4526
  • آزاد کشمیر 6000

 

عمران خان کیوں صدارتی نظام چاہتےہیں ؟

عمران خان کیوں صدارتی نظام چاہتےہیں ؟
اپ لوڈ :- جمعرات 30 مئی 2019 اپ ڈیٹ :- جمعرات 02 مئی 2019
ٹوٹل ریڈز :- 254

پچھلےدنوں صدرمملکت عارف علوی نےایک انٹرویومیں کہاکہ ان کی جماعت میں صدارتی نظام پرسنجیدہ بحث ہوتی رہتی ہےکیونکہ پارٹی میں بہت سےلوگوں کےخیال میں صدارتی نظام میں سربراہ مملکت زیادہ صاحب اختیارہوتاہےاوراسی وجہ سےوہ زیادہ بااعتمادطریقےسےکام کرسکتاہے۔

ذرائع کےمطابق وزیراعظم عمران خان پارلیمانی نظام میں زیادہ خوش نہیں ،یہی وجہ ہےکہ وہ پارلیمنٹ میں آتےہیں نہ اپوزیشن رہنماوں سےملناپسندکرتےہیں ۔ حال ہی میں ہونےوالی قومی سلامتی کمیٹی کےاجلاس میں بھی وہ محض اس وجہ سےنہیں آئےکہ اپوزیشن رہنماوں سےہاتھ نہ ملاناپڑے۔ لیکن اپوزیشن سےدوررہنےکاایک نقصان یہ ضرورہواہےکہ پچھلےنو ماہ سےقومی اسمبلی میں ایک بھی موضوع پرسنجیدہ بحث نہیں ہوسکی ، ہراجلاس الزام تراشی اورشورشرابےسےشروع ہوکراسی پرختم ہوجاتاہے۔

پارلیمانی نظام کی خامیاں اپنی جگہ لیکن اس کاہرگزیہ مطلب نہیں کہ ایک شخص کےہاتھ میں سارےاختیارات دےدئیےجائیں ۔ واقفان حال کہتےہیں کہ ان دنوں جواٹھارویں ترمیم میں کیڑےنکالےجارہےہیں وہ بھی دراصل صدارتی نظام کیلئےراہ ہموارکرنےکی ایک کوشش ہے۔ لیکن صدارتی نظام کےحمایتی یہ بھول رہےکہ پاکستان جیسےملک میں جہاں مختلف زبانوں اورثقافت کےحامل لوگ رہتےہیں وہاں اختیارات کی مرکزیت تباہ کن ثابت ہوسکتی ہے،پاکستان کوجوڑےرکھنےوالےپارلیمانی نظام کوچھیڑنےکےبعدوہی ہوگاجوشہدکی مکھیوں کےچھتےکوآگ دکھانےکےبعدہوتاہے۔مکھیاں اڑجائیں گی ، چھتاختم ہوجائےگااورچندلوگ اس چھتےسےحاصل ہونےوالاشہدآپس میں بانٹ لیں گے ۔۔ اللہ اللہ خیر صلا۔

صدارتی نظام کےمارکیٹنگ مینیجرزایک دلیل یہ پیش کرتےہیں کہ پاکستانی معیشت نےآمرانہ ادوارمیں زیادہ ترقی کی ہے،حالانکہ وہ یہ بھول جاتےہیں آمرانہ ادوارمیں معاشی ترقی اس فراخدلانہ امریکی امدادکی مرہون منت تھی جوامریکاکوخدمات مہیاکرنےکےعوض دی ملتی تھی ۔

عمران خان صدارتی نظام کاتجربہ کرناچاہتےہیں ،شوق سےکریں لیکن یادرکھیں اس کےنتائج ان کی توقعات کےبالکل برعکس نکلیں گے۔

 

Muhammad Zaheer

The author is a journalist. He is currently working for a news channel.

Muhammad Zaheer مزید تحریریں

Muhammad Zaheer

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.