Enjoy The Best News and Blogs
بہترین خبریں ، بلاگ اور تجزئیے

" - صحافت اور قوموں کا زوال ایک ساتھ ہوتا ہے"

Failure is word unknown to me ...

         

( تلاش کریں )

Shortcut( شارٹ کٹ )

جج ویڈیوسکینڈل،قابل غورریمارکس

20 Aug 2019 36

ویب ڈیسک ۔۔ 
احتساب عدالت کے سابق جج ارشد ملک کے ویڈیو اسکینڈل سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران چیف جسٹس نےانتہائی اہم ریمارکس دئیے، ان ریمارکس سےہم یہ اندازہ توشایدنہیں لگاسکتےکہ فیصلہ کیاآئےگالیکن یہ ریمارکس بہرحال قابل غوراس لئےہیں کہ کم ازکم ان سےہم یہ اندازہ بخوبی لگاسکتےہیں کہ ملک کی اعلی ترین عدالت اس کیس کوکتنی اہمیت دےرہی ہے۔ یہاں یہ بات کہنےمیں بھی کوئی عارنہیں کہ اس کیس کافیصلہ بھلےجوبھی آئے،اس کےملکی سیاست پرگہرےاثرات مرتب ہونگے۔
 
چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی خصوصی بینچ نے ویڈیو اسکینڈل کیس کی سماعت کی، اٹارنی جنرل انور منصور خان اور ڈی جی ایف آئی اے عدالت میں پیش ہوئے۔
 
سماعت کے آغاز پر چیف جسٹس پاکستان نےپوچھاکہ تحقیقات مکمل کرنے کیلئے 3 ہفتے کا وقت دیا گیا تھا، اس رپورٹ میں 2 ویڈیوز کا معاملہ تھا، ایک ویڈیو وہ تھی جس کے ذریعے جج کو بلیک میل کیا گیا اور دوسری ویڈیو وہ تھی جو پریس کانفرنس میں دکھائی گئی۔
 
جسٹس عظمت سعید نے استفسار کیا کہ کیا پریس کانفرنس میں دکھائی گئی ارشد ملک کی ویڈیو کا فارنزک تجزیہ کیا گیا؟ اس پر ڈی جی ایف آئی اے نے بتایا کیا کہ ویڈیو ہمارے پاس نہیں۔
 
اس پر جسٹس عظمت سعید نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ ویڈیو سوائے ایف آئی اے کے پورے پاکستان کے پاس ہے، سارا پاکستان اور عدالت ایک ہی سوال پوچھ رہی ہے، کیا وہ ویڈیو صحیح ہے؟
 
ڈی جی ایف آئی اے نے عدالت کو بتایا کہ اس ویڈیو کا فارنزک نہیں ہوا، جس پر عدالت نے شدید برہمی کا اظہار کیا، اٹارنی جنرل نے عدالت کو ویڈیو کے فارنزک کی بھی یقین دہانی کرائی۔
 
دورانِ سماعت چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیے کہ رپورٹ سے ابہام پیدا ہوا ہے، غالباً 2 ویڈیوز تھیں، قابل اعتراض ویڈیو وہ تھی جس سے جج کو بلیک میل کرنے کی کوشش کی گئی، دوسری ویڈیو پریس کانفرنس میں دکھائی گئی۔
 
چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ کیا قانونی فائدہ اٹھانے کیلئے کسی عدالت میں کوئی درخواست دی گئی؟ اس پر اٹارنی جنرل نے بتایا کہ کوئی درخواست دائر نہیں کی گئی۔
 
جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیے کہ نوازشریف کی رہائی اور سزا کے خاتمے کے لیے ویڈیو فائدہ مند تب ہوگی جب کوئی درخواست دائر کی جائے گی،
 
چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ سب سے پہلے یہ ویڈیو اصل ثابت ہوگی تو کافی اثرانداز ہوگی، جج ارشد ملک کا ایک ماضی ہے جسے وہ مان رہے ہیں، انہیں تو کوئی بھی بلیک میل کرسکتا ہے، جسے سزا دی اس کے گھرچلے گئے، اس کے بیٹے سے ملنے سعودیہ چلے گئے، کیوں؟ ارشد ملک کی حرکت سے ہزاروں دیانتدار اور محنتی ججوں کے سرشرم سےجھک گئے۔
 
جسٹس آصف سعید کھوسہ نے اٹارنی جنرل سے مکالمہ کیا کہ آپ اس سارے معاملے کو ہلکا لے رہے ہیں، ہمارا تعلق اپنے جج سے ہے، اس کے کردار پر بہت سے سوالیہ نشان آگئے ہیں، جج نے بہت سی چیزیں حلف نامے اور پریس ریلیز میں بتائیں، معلوم نہیں جج صاحب کو کس نے مشورہ دیا۔
 
اٹارنی جنرل نے کہا کہ اس ویڈیو کو اصل ثابت کرنا بہت مشکل کام ہوگا، اس پر چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیے کہ قابل اعتراض ویڈیو پرتو جج نے بھی اعتراف کیا ہے لیکن جو پریس کانفرنس میں دکھائی وہ اصل ثابت کیسے ہوگی؟ ویڈیو معاملہ ماہرین سے کلیئر کرائیں کہ فارنزک ہوسکتا ہے یا نہیں، رپورٹ میں تسلیم کیا گیا کہ آڈیو رکارڈنگ الگ کی گئی، پریس کانفرنس کے دوران ویڈیو کا سب ٹائٹل بھی چل رہا تھا، لگتا ہے ویڈیو کے ساتھ کسی نے کھیلا ہے۔
 
بعد ازاں چیف جسٹس نے ریمارکس دیےکہ کیس کی سماعت مکمل ہوگئی اور دو تین دن میں ہم اس معاملے پر فیصلہ دیں گے۔
 

تازہ ترین

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

Two Muslim women make history in America

The US media reported the women include 31 first-time House members which is seven more than record set for freshmen women during the 1992 “Year of the Woman” election. &n
By : Ali Usman
10 Nov 2018

نواز شریف کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں نیب کی اپیل پر آج سماعت

نواز شریف کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں نیب کی اپیل پر آج سپریم کورٹ میں میں سماعت ہو گی. چیف جسٹس کی سربراہی میں
14 Jan 2019

جسٹس شوکت صدیقی نےمنہ کھول دیا

لاہور: (ویب ڈیسک) سپریم جوڈیشل کونسل کی سفارش پراسلام آبادہائیکورٹ سےفارغ کئےجانےوالےجسٹس شوکت عزیزصدیقی پ
15 Nov 2018

گوگل نے روپے کی قدر آسمان پر پہنچا دی

گوگل نے راتوں رات روپے کی قدر میں اضافہ کر دیا. گوگل کرنسی کنورٹر پر روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر 76 روپ
16 Jan 2019