News Makers

پشاوردھماکا :-دیرکالونی پشاورکےمدرسےمیں دھماکا،7افرادشہید،112سےزائدزخمی
پشاوردھماکا :-دھماکاٹائم ڈیوائس کےذریعےکیاگیا ، پولیس حکام
پشاوردھماکا :-دھماکےکےوقت مدرسےکےہال میں ایک ہزارسےزائدافرادہال میں موجودتھے
پشاوردھماکا :-دھماکاخیزموادمیں چھرےبھی تھے،یہ موادایک بیگ میں رکھاگیاتھا ، اےآئی جی
پشاوردھماکا :-دھماکاکسی بڑےمنظم گروپ کی کارروائی لگتاہے ، اےآئی جی
پشاوردھماکا :-دھماکےکی جتنی مذمت کی جائےکم ہے ، وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز
پشاوردھماکا :-دھماکےمیں بیرونی ہاتھ کوخارج ازامکان قرارنہیں دیاجاسکتا ، کامران بنگش
پشاوردھماکا :-پشاور دھماکے نے انتہائی رنجیدہ کردیا ہے: مریم نواز
پشاوردھماکا :-جن ماؤں کی گودیں اجڑ گئیں، انکے دُکھ کا تصور اور ازالہ ممکن نہیں،مریم نواز
شہبازشریف :-شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی درخواست خارج
شہبازشریف :-نیب کی درخواست پرسپریم کورٹ کے2رکنی بنچ نےسماعت کی
شہبازشریف :-مشکوک ٹرانزیکشنز کرپشن کے زمرے میں نہیں آتیں،سپریم کورٹ
شہبازشریف :-جسٹس فائز عیسیٰ کیس میں اینٹی منی لانڈرنگ قوانین کی تشریح کی جاچکی،جسٹس منیب اختر

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
320463
  • اموات 6601
  • سندھ 140756
  • پنجاب 101014
  • بلوچستان 15577
  • خیبرپختونخوا 38427
  • اسلام آباد 17526
  • گلگت بلتستان 3965
  • آزاد کشمیر 3198

 

نائب قاصدبھی وزیراعظم سےاچھی تقریرکرتا ، احسن اقبال

نائب قاصدبھی وزیراعظم سےاچھی تقریرکرتا ، احسن اقبال
اپ لوڈ :- اِتوار 11 اکتوبر 2020
ٹوٹل ریڈز :- 52

جنرل سیکریٹری ن لیگ ، احسن اقبال نے کہا کہ وزیراعظم کی جمعے کی جو تقریر ہے مجھے نہایت افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ اگر کسی نائب قاصد کو بھی تقریر کرنے کے لئے کھڑا کیا جائے تو وہ زیادہ ذمہ داری کا مظاہرہ کرے گا۔ 
 
نجی ٹی وی کےپروگرام میں اینکرسےبات کرتےہوئےاحسن اقبال کاکہناتھاکہ وزیراعظم نےجس درجے اور لہجے میں تقریر کی ہے وہ کسی بھی وزیراعظم کے شایان شان نہیں ہے ۔ جب وزیراعظم یہ کہےگاکہ ملک کاحساس ترین سکیورٹی کاادارہ میری بھی جاسوسی کرتاہےاورمجھ سےپچھلےوزیراعظم کی جاسوسی بھی کرتاتھا اوروہ ان کی دولت کی تاک میں رہتاتھااوریہ دیکھتاتھاکہ انہوں نےکتنی کرپشن کی ہے۔ کیایہ ان حساس ترین ادارں کی عزت افزائی ہے۔ 
 
جن اداروں کامینڈیٹ ملک کی سکیورٹی ہے۔ جب وزیراعظم کےسیاسی مخالف اداروں کوان کےمینڈیٹ کےتجاوزکی بات کرتےہیں تووزیراعظم ان بیانات کےبعداداروں کومزیدمتنازعہ بنارہےہیں ۔ یہ اپنی سیاسی جنگ ہارنےکےبعداداروں کےپیچھےچھپنےکی کوشش کررہےہیں ۔ یہ اداروں کواپنےلئےڈھال بنارہےہیں۔ 
 
وہ فوج جس کوان حالات میں تمام ترتوجہ سکیورٹی پررکھنی ہےان اداروں بلاکرحکومت نالوں کی صفائی کروارہی ہے۔ آج تاجرحضرات تک جاکرآرمی چیف کےپاس جاکراپنےمسئلےحل کروارہےہیں ۔ 
 
حکومت کےبقول اداروں میں مثالی تعاون کےبعدحالت یہ ہےکہ معیشت تباہ ہوچکی ہے، شرح نمومنفی میں جاچکی ہے، انتظامی ڈھانچہ مفلوج ہوچکاہے، مہنگائی آسمان کوچھورہی ہے۔ 
 
ہم نےاس حکومت کودوسال دئیےکہ یہ پرفارم کرسکیں ۔ لیکن ہم دن بدن نیچےجارہےہیں ۔ کیاہم اس تباہی کوخاموش تماشائی بنکردیکھتےرہیں گے۔ 
 
احسن اقبال نےکہاکہ پاک فوج ایک پروفیشنل ادارہ ہے،ہم اپنےشہداکوسلام پیش کرتےہیں لیکن اس کےساتھ پاکستان کی ایک تاریخ ہے۔ پاکستان میں ایک بلاہےجس کانام اسٹیبلشمنٹ ہے،جس میں کبھی کبھارججزبھی شامل ہوتےرہےہیں ۔ اس کھیل نےپاکستان میں کبھی جمہوریت کوپنپنےنہیں دیا۔ ہم کہتےہیں کہ اس ملک کوآئین کےتحت چلناچاہیے۔ 

ٹیگز

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.