News Makers

تازہ ترین

ترکی نےروس کوپلان بی پرعملدرآمدکی دھمکی دےڈالی ۔۔

ترکی نےروس کوپلان بی پرعملدرآمدکی دھمکی دےڈالی ۔۔
اپ لوڈ :- سوموار 10 فروری 2020
ٹوٹل ریڈز :- 3

ویب ڈیسک ۔۔
 
ترکی نےروس کوخبردار کیا ہے کہ اگر شام کے شمال مغرب سے متعلق 'محفوظ زون' کے امن معاہدے کی خلاف ورزیاں جاری رہیں تو اسےمجبوراً پلان بی یعنی فوجی ایکشن پر عملدرآمدکرناپڑےگا۔
 
الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے وزیر دفاع ہولوسی آکار نے کہا کہ 'اگر معاہدے کی خلاف ورزی ہوتی رہی تو ہمارے پاس پلان بی اور پلان سی ہے'۔
 
انہوں نے پلان بی اور سی کی تفصیلات بتانے سےتوبہرحال گزیز کیا لیکن انقرہ کی جانب سے 2016 میں ہونے والی فوجی کارروائیوں کا حوالہ ضرور دیا۔
 
ترک وزیر دفاع نے کہا کہ 'معاہدے کے مطابق ہماری چوکیاں ادھر ہی رہیں گی اس کے باوجود اگر کوئی رکاوٹ ہے تو ہم نے واضح طور پر کہا تھا کہ جو ضروری ہو گا وہ ہم کریں گے'۔
 
واضح رہے کہ روس کے ساتھ 2018 کے معاہدے کی رو سے ترکی نے ادلب میں 12 پوسٹیں قائم کی تھیں۔ جن میں سے3 کو ترکی کے سیکیورٹی ذرائع کےمطابق رواں ہفتےشام کے صدر بشارالاسد کی سرکاری فورسز نے گھیرے میں لے لیا تھا۔
 
ترک صدر رجب طیب اردوان نے دمشق کو رواں ماہ کے اواخر تک چوکیوں سے پیچھے ہٹنے کا کہتے ہوئے خبردار کیا تھا کہ اگر وہ ایسا نہیں کرتے ہیں تو انقرہ ملٹری ایکشن کےذریعےواپس بھیج دے گا۔
 
یہ بھی پڑھیں۔۔
 
انہوں نے روس پر بھی زور دیا کہ وہ شامی حکومت کو جاری کارروائی کو روکنے کے لیےقائل کرے۔
 
واضح رہے کہ ترکی اور روس کے مابین شامی کرد فورسز (پی وائے جی) کو ترک سرحد سے 30 کلو میٹر دور رکھنے کا معاہدہ طے پایا تھا۔
 
یہ بھی پڑھیں ۔۔
 
ترکی کی روس کوسخت تنبیہ یہ ظاہرکرتی ہےکہ وہ خارجہ تعلقات کےحوالےسےہمیشہ سخت اوربولڈفیصلےکرتاہے۔ یادرہےکہ ترکی نےامریکاکی کڑی وارننگ کےباوجودروس سےمیزائل دفاعی نظام خریدنےکانہ صرف معاہدہ کیابلکہ اس معاہدےکی خاطراسےامریکاسےملنےوالےانتہائی جدیدلڑاکاطیارےایف 35کی قربانی بھی دیناپڑی ۔۔۔
 
یہ بھی پڑھیں ۔۔

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.