News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
285191
  • اموات 6112
  • سندھ 124127
  • پنجاب 94586
  • بلوچستان 11921
  • خیبرپختونخوا 34755
  • اسلام آباد 15281
  • گلگت بلتستان 2371
  • آزاد کشمیر 2150

 

ایم کیوایم کےبعد ق لیگ بھی ناراض،تحریک انصاف حکومت کوگھربھیجنےکی تیاریاں

ایم کیوایم کےبعد ق لیگ بھی ناراض،تحریک انصاف حکومت کوگھربھیجنےکی تیاریاں
اپ لوڈ :- بدھ 15 جنوری 2020
ٹوٹل ریڈز :- 246

 وہی ہوا،کچھ لوگ جس خدشےکااظہارکررہےتھے۔ آرمی ایکٹ ترمیمی بل کےقومی اسمبلی اورسینیٹ سےمنظورہوتےہی وزراکےلہجےاچانک بدل گئےاورن لیگ کےخلاف کچھ عرصےسےبندمحاذپھرسےکھل گئے۔ ن لیگ کوریلیف ملنےیادئیےجانےکا تاثر تیزی سے ختم ہورہاہےاوروزیراعظم عمران خان نےکابینہ اجلاس کی صدارت کرتےہوئےنوازشریف کوفراڈیاقراردےدیا۔ تحریک انصاف کےرکن قومی اسمبلی صداقت عباسی نےایک ٹی وی ٹاک شومیں گفتگوکرتےہوئےکہاکہ نوازشریف توہشاش بشاش لگتےہیں،لگتاہےہمارےساتھ ہاتھ ہوگیا۔ پنجاب کےوزیراطلاعات فیاض چوہان نےتوحدہی کردی ۔ بولےنوازشریف ملک سےباہرہوں توہواخوری اورملک میں ہوں توحرام خوری کرتےہیں ۔ 
 
ویسےمجھےتوذاتی طورپریہ بات سمجھ نہیں آرہی کہ حکومت کوغصہ مبینہ طورپرمسلم لیگ ن اوراسٹیبلشمنٹ میں بڑھتی ہوئی قربتوں پرہےیاپھروہی بات کہ ن لیگ کےساتھ ایک بارپھرہاتھ ہوگیا؟ سچ کیاہے؟ یہ جاننےکیلئےہمیں زیادہ دن انتظارنہیں کرناپڑےگا۔ 
 اورسنیں ۔۔ ایک خبریاتجزئیےکےمطابق تحریک انصاف کی حکومت میں سب اچھانہیں چل رہااوراس کی وجہ جاننےکیلئےکسی راکٹ سائنس کی ضرورت نہیں بلکہ سیاسی اشارئیےہی کافی ہیں ۔ جیسےکہ ابھی ایم کیوایم کی ناراضی کاشورہی کم نہ ہواتھاکہ ایک اورحکومتی اتحادی جی ڈی اے کےکیمپ سےبھی امی دودھ،امی دودھ کی آوازیں آناشروع ہوگئی ہیں۔ بہتی گنگامیں ہاتھ دھونےکیلئےق لیگ بھی میدان میں کودپڑی ہےاورسناہےجلدہی اس سلسلےمیں حکومتی بڑوں سےاہم ملاقات ہونےجارہی ہےاورذرائع کےمطابق دال اب بھی نہ گلی توق لیگ والےپتلی گلی سےنکل جائیں گے۔ ذرائع یہ بھی بتاتےہیں کہ چودھری برادران جوہمیشہ کھبی دکھاکرسجی مارنےکےماہرہیں ، آج بھی غیرمحسوس اندازسےتبدیلی لانےکےکام میں مصروف ہیں ۔ قومی اردوروزنامےمیں شائع ایک خبرکےمطابق ق لیگ قومی اسمبلی ، پنجاب اسمبلی اور بلوچستان اسمبلی میں تبدیلی لاسکتی ہے اور اس سلسلے میں مولانافضل الرحمن کے ذریعے ساری اپوزیشن بھی مکمل طور پر شریک ہے۔ 
 
خبرکےمطابق بلوچستان اسمبلی کےسپیکرقدوس بزنجوبلوچستان میں ق لیگ اورفضل الرحمن کی مدد سےتبدیلی لائی جاسکتی ہے، قدوس بزنجوکےمطابق اُن کے ساتھ بلوچستان عوامی پارٹی کے ناراض ارکان بھی شامل ہیں ۔ قدوس بزنجو کے ساتھ بلوچستان عوامی پارٹی کے سات ناراض ارکان جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے چار اور اسرار اللہ زھری گروپ کے تین ارکان حکومتی بینچوں سے شامل ہیں جبکہ اپوزیشن کے بائیس ارکان ملاکر 65 کے ایوان میں 36 ممبران کی اکثریت سے صوبائی حکومت بدل سکتے ہیں۔ پنجاب اسمبلی میں ق لیگ خود وزارت اعلی کا عہدہ چاہتی ہےاورمولانا فضل الرحمن اس سلسلےمیں نون لیگ کو تیارکرچکے ہیں۔
 
 پنجاب میں اس وقت 368 کے ایوان میں حکومت کے ساتھ ق لیگ کے دس ارکان اور چار آزاد ارکان ملاکر 195 ارکان ہیں جبکہ اپوزیشن کے ساتھ 173 ارکان ہیں۔ اگر چوہدری پرویز الہی اپنے ساتھ دو آزاد ارکان اوکاڑہ سے جگنو محسن اور ملتان سے قاسم عباس بھی لے آتے ہیں تو سادہ اکثریت سے وزیر اعلی بن سکتےہیں ۔ ذرائع کایہ بھی کہناہےکہ پنجاب میں پی ٹی آئی کے چوبیس ناراض ارکان کسی بھی رائے شماری کےدن اسمبلی سےغیرحاضر ہوسکتے ہیں۔
یہ بھی پڑھیں۔۔
تودوستو،خبرکی کہانی سننےاورپڑھنےسےتولگتاہےکہ معاملات اندرخانےانتہائی خراب ہوچکےہیں اورلگتایوں ہے کہ تحریک انصاف کی وفاق اورپنجاب میں قائم حکومتوں کی رخصتی کی تیاریاں مکمل کی جاچکی ہیں ۔ لیکن مت بھولیں کہ یہ پاکستان ہےاوریہاں تبدیلی سیاستدانوں کی مرضی سےنہیں آتی ۔ اب اگرتوق لیگ اورایم کیوایم کی ناراضگی کی پیچھےکوئی اورہےتوحکومت واقعی خطرےمیں ہے،دوسری صورت میں معاملات ہمیشہ کی طرح کچھ لواورکچھ دوپرآکرمزیدکچھ عرصےکیلئےختم ہوجائیں گے ۔ 

Muhammad Zaheer

The author is a journalist. He is currently working for a news channel.

Muhammad Zaheer مزید تحریریں

Muhammad Zaheer

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.