Enjoy The Best News and Blogs
بہترین خبریں ، بلاگ اور تجزئیے

" - صحافت اور قوموں کا زوال ایک ساتھ ہوتا ہے"

Failure is word unknown to me ...

         

( تلاش کریں )

Shortcut( شارٹ کٹ )

(پارلیمانی نظام کیخلاف سازش ؟ (دوسراحصہ

30 Apr 2019 112

پارلیمانی نظام کیخلاف سازش تونہیں ہورہی ؟

(گزشتہ سےپیوستہ)

کچھ لوگ ریس کےزبردست کھلاڑی ہوتےہیں لیکن شرط یہ ہےکہ ریس میں دوڑنےوالےوہ اکیلےہوں،اورایسےمیں امپائربھی ساتھ مل جائےتوکیاکہنے۔ لیکن کچھ لوگ اتنےنکمےہوتےہیں کہ یہ سب کچھ ہوتےہوئےبھی فنش لائن تک نہیں پہنچ پاتے۔

چلیں ہم اپنےٹاپک پرواپس آتےہیں ۔ صدارتی نظام

پاکستان میں ایوبی دورحکومت کوصدارتی نظام کی بہترین مثال بناکرپیش کیاجاتاہے،ہم نےبھی اپنےبڑوں سےیہی سناہےکہ ایوب خان کےدورحکومت میں پاکستان دن دگنی رات چوگنی ترقی کررہاتھا۔ آئیےاس دورپرایک نظرڈالتےہیں : معروف کالم نگاربلال غوری : ایوب خان کےسنہری دورکی حقیقت کےعنوان سےاپنےکالم میں قدرت اللہ شہاب کی کتاب کاحوالہ دیتےہوئےلکھتےہیں : "بہت سےلوگ ایوب خان کےدورحکومت کومادی ترقی کاسنہری دورکہتےہیں ،بےشک اس میں کوئی کلام نہیں لیکن جن غیریقینی اورناقابل اعتبارسہاروں پراس کی بنیادرکھی گئی اسےقائم رکھنےکیلئےہمیں  ہرزمانےمیں طرح طرح کےپاپڑبیلناپڑے۔" اگرایوب خان کےدورمیں دودھ اورشہیدکی نہریں بہہ رہی تھیں تومشرقی پاکستان کواپنی محرومیوں کاروناروتےہوئےکیوں ہم سےالگ ہوناپڑا؟

سچ تویہ ہےکہ ایوبی دورکوجس سنہرے دورکےطورپرپیش کیاجاتاہے،وہ محض الفاظ کا ہیرپھیرہے،اس کاحقیقت سےکوئی تعلق نہیں ۔ یہ وہ دورتھاجب غیرملکی امداداورقرضوں کی بارش ہورہی تھی ۔ گندم کےتھیلےبھی  امریکاسےامدادکی شکل میں آیاکرتےتھے،جن پرشکریہ امریکالکھاہوتاتھا۔ آج ہم جس کشکول کاروناروتےہیں ، اسی سنہرےدورکی دین ہے۔ امریکی چاپلوسی کےباعث بیرونی قرضوں کی بجائےبیرونی امدادکاحجم بہت زیادہ تھا۔ ایوبی دورکےبارےمیں ایک اوربات یہ کہی جاتی ہےکہ اس دورمیں صنعتیں بہت تیزی سےلگ رہی تھیں ، اگرواقعی ایساتھاتوہم کپاس کیوں برآمدکررہےتھےاوراسی نام نہادصنعتی ترقی سےجڑی ایک اوربات یہ بھی ہےکہ اگرواقعی صنعتی ترقی اپنےجوبن پرتھی تومحصولات کاحجم کیوں نہیں بڑھ رہاتھا؟ اب ہمارےوزیراعظم عمران خان کن معلومات کی بنیادپرایوب خان کی تعریفیں کرتےہیں وہ خودہی بہتربتاسکتےہیں ۔

صدارتی نظام کےحمایتیوں کےخیال میں یہ پارلیمانی نظام سےزیادہ مستحکم ہےجس میں وزیراعظم محض ایک تحریک عدم اعتمادکی مارہوتاہے۔ حالانکہ حقیقت میں ایسانہیں ۔ وقت کےساتھ ساتھ پارلیمانی نظام کی خرابیوں کودورکردیاگیاہے،اٹھارویں ترمیم کےبعدوزیراعظم کوگھربھیجنااتناآسان نہیں جتنابدنام زمانہ اٹھاون ٹوبی کے دورمیں ہواکرتاتھا۔ فلورکراسنگ بھی اب ماضی کی نسبت آسان نہیں رہی ۔ اس طرح سےدیکھاجائےتوپارلیمانی نظام صدارتی نظام سےکم مستحکم اورمضبوط نہیں ؟

صدارتی نظام کےحمایتی یہ بات ذہن میں رکھیں کہ امریکاجیسےملک میں بھی کانگرس اوراوول آفس کےدرمیان کسی بات پرٹھن جائےتومعاملات مہینوں لٹکےرہتےہیں ۔ میکسیکوکی سرحدپردیوارتعمیرکرنےکےمعاملےپرامریکی ایوان نمائندگان اورصدرٹرمپ کےدرمیان جواٹ کھڑکاہوا،وہ سب کےسامنےہے۔ اس لئےپارلیمانی نظام کوہرصورت غلط ثابت کرنےکیلئےصدارتی نظام کی تعریف میں زمین و آسمان کےقلابےملانادرست نہیں ۔ (جاری ہے)

 

 

Author: Muhammad Zaheer

The author is a senior journalist. He is currently working for a news channel.

Read More From: Muhammad Zaheer

تازہ ترین

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

یوٹرن تواچھےہوتےہیں

یوٹرن تواچھےہوتےہیں اسلام علیکم دوستو۔۔  قسمت کےکھیل بھی نرالےہیں،کب کیاہوجائے،پتاہی نہیں چلتا،یوٹ
By : Muhammad Zaheer
12 Jan 2019

اگلی باری تحریک انصاف کی

دوستو،آج آپ سےایک بات شیئرکرنی ہے۔ کچھ عرصہ پہلےجب ملک میں ن لیگ کی حکومت تھی ،نیب کامولابخش پیپلزپارٹی
By : Muhammad Zaheer
30 Oct 2018

نیاپاکستان ، حقیقت یاخواب ؟

تحریک پاکستان نئےپاکستان کانعرہ لگاکرحکومت میں آئی ہے ۔ لیکن میراایک سیدھااورمعصومانہ ساسوال ہےکہ یہ نیاپ
By : Muhammad Zaheer
26 Oct 2018

سیاستدان اورگاوں کاچور

 پاکستان کےموجودہ سیاسی حالات پرغوروفکرکےگھوڑےدوڑاتےدوڑاتےمیں فی الحال اس نتیجےپرپہنچاہوں کہ کوئلوں کی
By : Muhammad Zaheer
19 Oct 2018