News Makers

تازہ ترین

فیصلےمیں نوازشریف کیلئےکیاہے؟

فیصلےمیں نوازشریف کیلئےکیاہے؟
اپ لوڈ :- جمعرات 30 دسمبر 2019 اپ ڈیٹ :- جمعرات 05 دسمبر 2019
ٹوٹل ریڈز :- 168

 (خصوصی تجزیہ نگار) 
 
ہم لوگ زبان اورایمان دونوں کےکچےہیں ۔ نہ اپنی زبان پہ قائم رہتےہیں نہ ایمان پہ ۔ سابق وزیراعظم نوازشریف کی ضمانت کےفیصلےکوہی لےلیں، ایک طرف توہم میں سےبہت سےیہ گمان رکھتےہیں کہ ہماری عدالتیں ایک ان دیکھےدباوکاشکارہیں،مبینہ طورپرواٹس ایپ پرفیصلےکرتی ہیں 
 
لیکن دوسری طرف جب انہی عدالتوں میں کوئی بڑااوراہم کیس آتاہےتوہم انصاف کی امیدلگاکےبیٹھ جاتےہیں اورنوازشریف کےکیس میں توانصاف سےبھی دوقدم آگےیعنی رحم کی امیدتھی ۔ یہ امیدتھی کہ فاضل عدالت بغیرکوئی شرط یاقدغن لگائےنوازشریف کومکمل صحت یابی تک ضمانت پررہاکرےگی لیکن بوجوہ ایسانہ ہوسکااوراسلام آبادہائیکورٹ نےمیاں نوازشریف کوالعزیزیہ ریفرنس میں سزامعطل کرکےدوماہ کیلئےطبی بنیادوں پررہاکردیا ۔ چلیں فیصلہ کسی کوپسند آئےنہ آئے،بدترین سیاسی حالات میں تازہ ہواکاایک جھونکاضرورہے،لیکن یہ سوال بہرحال اپنی جگہ موجودہےکہ تازہ ہواکےاس جھونکےمیں نوازشریف کیلئےکیاہے؟
 
 پورےفیصلےمیں سب سےاہم اورقابل توجہ بات میرےنزدیک یہ ہےکہ فاضل عدالت نےنوازشریف پرعلاج کی غرض سےبیرون ملک جانےپرکوئی پابندی نہیں لگائی ۔ فیصلےمیں کہیں یہ نہیں کہاگیاکہ نوازشریف ملک سےباہرنہیں جاسکتے۔ یہ بات اس لئےبھی اہمیت اختیارکرجاتی ہےکیوںکہ
اس سےپہلےجب سپریم کورٹ نےنوازشریف کوطبی بنیادوں پرچھ ہفتےکیلئےرہاکیاتھاتوان کےباہرجانےپرپابندی لگادی تھی ۔
 
 
 فیصلےکادوسرااہم نقطہ یہ ہےکہ ضمانت کی مدت یعنی دوماہ بعدنوازشریف کی طبیعت بدستورخراب ہوتوضمانت میں توسیع کیلئےعدالت سےرجوع کرنےکی بجائےپنجاب حکومت کودرخواست کریں گے۔ جب تک درخواست پنجاب حکومت کےپاس پراسیس میں رہتی ہےتب تک نوازشریف ضمانت پرتصورہونگے۔ بصورت دیگرنوازشریف کی ضمانت ختم ہوجائےگی اورانہیں دوبارہ جیل جاناپڑےگا ۔
 
دعاہےنوازشریف دوماہ سےپہلےپہلےمکمل صحت یاب ہوجائیں لیکن خدانخواستہ وہ مکمل ٹھیک نہیں ہوتےتوکیامسلم لیگ ن پنجاب حکومت سےاپنےقائدکیلئےرحم کی بھیک مانگےگی ؟ بظاہرتوایساہوتانظرنہیں آتالیکن یہاں بھی میاں صاحب کیلئےایک کھڑکی کھلی ہے ۔
 
 وہ کھڑکی یہ ہےکہ پنجاب حکومت دوماہ کی مدت ختم ہونےکےبعدمیاں صاحب کی حالت کےپیش نظرازخودان کی مدت ضمانت میں توسیع کردے،لیکن یادرہےایساصرف ایک ہی صورت میں ہوگا ۔ جانتےہیں وہ صورت کیاہے؟
 
وہ صورت یہ ہےکہ نوازشریف بیرون ملک علاج کیلئےمان جائیں ۔۔ ایساہوگیاتوبہت سی سازشی تھیوریزجنم لیں گی جن کاذکروقت آنےپرکروں گا ۔
 
-----------
 
Islamabad High Court nay Nawaz Sharif ko 8 week ke lia zamanat pr raha kr dia hay. Adalat ke is faislay ke mutabiq Nawaz Sharif per mulk say bahar ja kar ilaaj krwanay pr koi pabandi nahi lagai gai. Faislay ke mutabiq 8 hafton ke baad agar Nawaz Sharif ko mazeed zamanat ki zarorat ho to wo Punjab hakomat ko darkhwast dain. Agar NS Punjab Govt ko darkhwast nahi detay to unki zamanat mansookh ho jai gi. Aor agar wo mazeed zamanat ke lia Punjab Govt to application detay hian to jab tak application process mein rahay gi NS zamanat pr tasawar kiay jain gay. 
Wasay agar Punjab Govt chahy to khud bhi 8 hafton ke baad NS ki zamanat mein izafa kr sakti hy. Political pundits ke khayal mein agar to NS ilaaj ke lia mulk say bahar chalay jain to Punjab Govt unki zamanat mein tosee kr sakti hy.

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.