News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
274289
  • اموات 5842
  • سندھ 118311
  • پنجاب 92073
  • بلوچستان 11601
  • خیبرپختونخوا 33397
  • اسلام آباد 14884
  • گلگت بلتستان 1989
  • آزاد کشمیر 2034

 

ذاکرنائیک کوواپس انڈیالانےکیلئےمودی سرکارسرگرم

ذاکرنائیک کوواپس انڈیالانےکیلئےمودی سرکارسرگرم
اپ لوڈ :- جمعرات 25 جون 2020
ٹوٹل ریڈز :- 84

ڈاکٹرذاکرنائیک ۔۔ دوستواس نام سےکون واقف نہیں ؟ برصغیرپاک وہندکیا پوری دنیامیں مذاہب کاتقابلی جائزہ کےموضوع پرڈاکٹرصاحب سےبڑاماہرکم ازکم اس وقت توموجود نہیں ۔۔ اس میدان کےبڑےبڑےجغادری شہسوارجب ڈاکٹرصاحب جیسےبظاہرکمزوراوردھان پان سےدکھنےوالےشخص کےسامنےآئےتولمحوں میں چاروں خانےچت ہوگئے ۔۔ 

جیساکہ آپ سب لوگ جانتےہیں کہ ڈاکٹرذاکرنائیک ممبئی مہاراشٹراکےرہنےوالےہیں ، پیشےکےاعتبارسےمیڈیکل ڈاکٹرہیں ، بدن چھریرالیکن دماغ اوریادداشت ایسی کہ بندہ بےاختیارکہہ اٹھے۔۔ سبحان اللہ ۔۔ ڈاکٹرصاحب گزشتہ چندسالوں سےملائشیامیں رہ رہےہیں ۔۔اپنی مرضی سےنہیں بلکہ مجبوری میں اورجان بچانےکی خاطر۔۔ کیونکہ بھارت کی انتہاپسندمودی سرکارہاتھ دھوکران کےپیچھےپڑی ہے۔۔ مودی کوڈاکٹرصاحب سےشریف انسان سےکیامسئلہ ہے؟ یہ ہم آگےچل کرڈسکس کرتےہیں فی الحال ہم اس بات پرفوکس کرتےہیں کہ دلی سرکارڈاکٹرصاحب کوواپس انڈیالانےکیلئےکیاکیاپاپڑبیل رہی ہے۔   

ڈاکٹرذاکرنائیک کوملائشیاسےبھارت واپس لانےکیلئےان دنوں نئی دلی کےایوانوں میں ایک عددڈوزئیرکی تیاریاں زوروشورسےجاری ہیں ۔ اس ڈوزئیرکی تیاری کامقصدملائشین حکومت کوڈاکٹرصاحب کی بھارت حوالگی پرقائل کرنا۔ اسی مقصدکیلئےبھارتی وزارت داخلہ سمیت سفارتی ذرائع کےتوسط سےبھی ملائشین حکومت پردباوبڑھانےکافیصلہ کیاگیاہے۔ 

بھارتی میڈیامیں شائع رپورٹس کےمطابق مودی سرکارڈاکٹرذاکرنائیک کوہرقیمت پرملائشیاسےبھارت لاناچاہتی ہےاوراس مقصدکیلئےوہ اوچھےہتھکنڈوں پراترآئی ہے۔۔ اس سلسلےمیں تازہ الزام یہ تیارکیاگیاہےکہ ڈاکٹرصاحب نےدلی فسادات میں ملوث شخص خالدشفیع سےملائشیامیں ملاقات کی تھی ۔ یہ الزام لگاکرذاکرنائیک کودہشت گردوں کاحامی ثابت کرنےکی کوشش کی جائےگی۔ دہلی فسادات کی تحقیقات کرنےوالی عدالت کےجج دھرمندرراناکوکہاگیاہےکہ ڈاکٹرذاکرنائیک کورواں برس فروری میں ہوئےفسادات کوبھڑکانےکاملزم قراردیاجائےتاکہ ملائشین حکومت کےسامنےذاکرنائیک کوغلط آدمی ثابت کیاجاسکے۔

ادھرڈاکٹرذاکرنائیک نےخالدشفیع نامی آدمی سےکسی بھی ملاقات سےانکارکیاہےاوراسےبھارت کابےبنیاداورجھوٹاالزام قراردیاہے۔ بھارتی ذرائع کےمطابق ڈاکٹرذاکرنائیک کوبھارت لاکرسزادلوانےکیلئےخصوصی کمیٹی بھی بنائی گئی ہے۔ 

ایک طرف ڈاکٹرذاکرنائیک پرعائدبھارتی الزامات ہیں اوردوسری طرف حقیقت یہ ہےکہ دلی فسادات پری پلانڈ تھےجن میں براہ راست وزیرداخلہ امیت شاملوث تھے۔ان فسادات میں درجنوں مسلمانوں کوچن چن کرماراگیا۔ متعددمسلم اکثریتی علاقوں پرحملےکئےگئے، فسادات میں مسلمانوں کی اربوں روپےکی جائیدادوں ، گاڑیوں اورکاروبارسمیت تیرہ مساجدومدارس کوبھی شہیدکردیاگیاتھا۔۔ اس سب کےباوجودمسلم کش فسادات میں ڈاکٹرذاکرنائیک کوملوث کرنےکیلئےجھوٹی کہانیاں بنائی جارہی ہیں ۔

بھارتی اخبار دی کوئنٹ کےمطابق مودی حکومت کی جانب سےنیاالزام یہ لگایاجارہاہےکہ ذاکرنائیک ملائشیامیں بیٹھ کربھارت میں فسادات کروارہےہیں ۔ بھارتی قانون نافذکرنےوالےاداروں کی جانب سےعدالت میں جمع کروائےجانےوالےحلف نامےمیں یہ الزام لگایاجارہاہےکہ رواں برس فروری میں ہونےوالےخونی فسادات میں مطلوب ملزم خالدشفیع نےملائشیامیں ذاکرنائیک سےملاقات کی تھی ۔۔

ڈاکٹرذاکرنائیک پرلگائےجانےوالےان تازہ الزامات پرخودبھارتی میڈیانےحیرانگی کااظہارکیاہے۔ ہندوستان ٹائمزلکھتاہےکہ دلی فسادات کاچالان کئی ماہ بعدپیش کیاجانااوراس میں ڈاکٹرذاکرنائیک کانام شامل کیاجاناحیران کن ہے۔

بھارت کی ڈھٹائی اورہٹ دھرمی کااندازہ یہاں سےلگالیں کہ ملائشیاکی حکومت ڈاکٹرذاکرنائیک کوحوالےکرنےکی تین بھارتی درخواستوں کوردکرچکی ہے۔ گزشتہ برس اس وقت کےوزیراعظم مہاتیرمحمدنےذاکرنائیک کوکلین چٹ دیتےہوئےکہاتھاکہ انہیں ہرگزبھارت کےحوالےنہیں کیاجائےگا۔

اوراب ملین ڈالرسوال ۔۔ مودی سرکارکوڈاکٹرصاحب سےکیامسئلہ ہے؟ لیکن اس سےپہلےکہ میں اس سوال کاجواب دوں ،، آپ لوگوں کیلئےیہ جاننابھی ضروری ہےکہ ڈاکٹرصاحب 2016 کے ڈھاکاکیفےبلاسٹ کےبعدبھارت چھوڑکرملائشیاچلےگئےتھےکیونکہ بھارتی حکومت ایک سازش کےتحت انہیں ڈھاکابم دھماکوں میں ملوث کرکےگرفتارکرناچاہتی تھی۔ اب آتےہیں اپنےسوال کی طرف کہ آخرمودی کوڈاکٹرذاکرنائیک کیوں کانٹےکی طرح کھٹکتاہے؟تواس کاجواب یہ ہےکہ ڈاکٹرذاکرنائیک محض ایک اسلامی سکالرکےطورپرمودی کوکچھ نہیں کہتا۔۔ مسئلہ اس وقت شروع ہواجب ڈاکٹرصاحب کی تعلیمات سےمتاثرہوکرسینکڑوں نہیں بلکہ ہزاروں ہندووں نےاسلام قبول کرناشروع کردیا۔۔بات یہیں پرنہیں رکی ۔۔ معاملہ اس وقت اورزیادہ گھمبیرہوگیاجب ڈاکٹرصاحب نےٹی وی پرہونےوالےایک بین الاقوامی مناظرےمیں مشہورہندوپنڈٹ شری روی شنکرکواپنےدلائل سےلاجواب کردیا۔ دوستوشایدیہی وہ مقام تھاجہاں بی جےپی کی انتہاپسندمودی سرکار،راشٹریہ سیوک سنگ،بال ٹھاکرےشیوسینااورہندوتواپریقین رکھنےوالی دیگرانتہاپسندجماعتوں نےبھانپ لیاکہ ڈاکٹرکاراستہ نہ روکاگیاتوکہیں آدھاہندوستان کلمہ نہ پڑھے لے۔۔ اب اس سےآگےمیراخیال ہےکچھ کہنےکی ضرورت نہیں ۔۔آپ خودسمجھدارہیں ۔۔ 

یہ سب جاننےکےبعدمیری طرح آپ کےذہنوں میں یہ سوال کلبلارہاہوگاکہ کیاملائشیاڈاکٹرذاکرنائیک کوبھارت کےحوالےکردےگا۔۔ اس معاملےمیں فی الحال یقین سےکچھ کہنادرست نہیں ہوگا ہاں بھارت کےاپنےسیاسی وسماجی حلقوں کےمطابق ملائشیاکی موجودہ حکومت سابقہ حکومت سےزیادہ مذہبی ہےاوروہ کسی صورت ڈاکٹرصاحب کوبھارت کےحوالےنہیں کرےگی ۔ کیونکہ ایساکرنےکی صورت میں ملائشین حکومت کےاسلامی ووٹ پرکاری ضرب لگے گی ۔۔  

--------------

 

Muhammad Zaheer

The author is a journalist. He is currently working for a news channel.

Muhammad Zaheer مزید تحریریں

Muhammad Zaheer

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.