News Makers

تازہ ترین

کورونا وائرس پاکستان میں مصدقہ کیسز
251492
  • اموات 5264
  • سندھ 105533
  • پنجاب 87043
  • بلوچستان 11185
  • خیبرپختونخوا 30486
  • اسلام آباد 14023
  • گلگت بلتستان 1658
  • آزاد کشمیر 1564

 

سب رولا کرسی کا ہے

سب رولا کرسی کا ہے
اپ لوڈ :- ہفتہ 13 جولائی 2019
ٹوٹل ریڈز :- 132

کہتےہیں اس ملک میں سارارولاکرسی کاہے،کرسی ہےتوسب کچھ ہےاورکرسی نہیں کچھ بھی نہیں ۔ آپ سب کچھ ہوتےہوئےبھی لوگوں سےمنہ چھپاتےپھریں گے۔ یہ عجیب وغریب رویہ دراصل اخلاقی اقدارسےعاری اقوام کی پہچان ہےلیکن فی الوقت ہم قوم کےاجتماعی اخلاق کونہیں بلکہ ایک واقعےکوزیربحث لاناچاہتےہیں ۔

واقعہ کچھ یوں ہےکہ بےچارےمعصوم سےچہرےوالےچیئرمین سینٹ صادق سنجرانی اپنی کرسی بچانےکیلئےبھاگم بھاگ وزیراعظم عمران خان کےپاس مددکیلئےپہنچے۔ عمران خان نےانہیں یقین دلایاہےکہ ملکراپوزیشن کی تحریک عدم اعتمادکوناکام بنائیں گے۔

مجھےصادق سنجرانی کےخلاف تحریک عدم اعتمادکی کامیابی یانامی سےکوئی غرض نہیں ۔ مجھےتوعمران خان اورصادق سنجرانی کےدرمیان ملاقات سےوہ واقعہ یادآگیاجس میں ایک بچےنےکسی بات پرغصےمیں آکردوسرےبچےکی پٹائی کردی،اب

مارکھانےوالےبچےمیں خودبدلہ لینےکی سکت نہ تھی تواس نےروتےروتےمارنےوالےبچےکوبڑھک لگاتےہوئےکہاکہ ، ایتھےہی کھلومیں اپنےپرانوں لےکےآریاں یعنی تم ادھرہی کھڑےرہومیں اپنےبھائی کولیکرآتاہوں ۔

رونےوالابچہ گھرگیااوروہاں اپنےہی جیسےایک کمزورسےبڑےبھائی کوروروکراپناحال سنایااورنہ چاہتےہوئےبھی زبردستی اسےاپنےساتھ جاکرمارنےوالےبچےکوسبق سکھانےپراکسایا۔ بڑابھائی مرتاکیانہ کرتا،چھوٹےبھائی کےساتھ ہولیا۔ شومئی قسمت کہ جب دونوں بھائی وہاں پہنچےتووہاں مارنےوالےبچےکےایک نہیں کئی بڑےبھائی موجود تھے۔

شایدکچھ ایساہی معصوم سےچہرےوالےصادق سنجرانی کےساتھ ہونےوالاہےکیونکہ سینیٹ میں نمبرگیم کودیکھتےہوئےتحریک عدم اعتمادکانتیجہ دیوارپرلکھادکھائی دےرہاہے۔

چیئرمین سینیٹ کو ہٹانے کیلئے حزب اختلاف کی جماعتوں کے پاس مطلوبہ اکثریت سے زائد کی تعداد موجود ہے، 104 رکنی ایوان میں سینیٹرز کی موجودہ تعداد 103 میں سے چیئرمین کی نشست کے لئے 53 ارکان کی حمایت درکارہے۔

مسلم لیگ ن کے سینیٹرز کی تعداد 31، پیپلز پارٹی کے 21، نیشنل پارٹی کے 5، جے یو آئی ف کے 4، پختونخوا میپ کے 4 اور اے این پی کا ایک رکن شامل ہے۔

توجناب والایہ ہےسینیٹ میں نمبرگیم جس کےبعدبظاہرصادق سنجرانی کاجانایقینی لگتاہےلیکن حکومت بھی کامیابی کےدعوےکررہی ہے۔

بہرحال کچھ دنوں کی بات ہے،دودھ کادودھ اورپانی کاپانی ہوجائےگا۔ سیاسی پنڈتوں کےنزدیک چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی سےاپوزیشن کوکوئی بہت زیادہ سیاسی فائدہ نہیں ہونےوالاکیونکہ یہ محض ایک رسمی سی تبدیلی ہےلیکن اس سب کےباوجودچئیرمین سینیٹ کی تبدیلی کوتجزیہ کاراپوزیشن کیلئےبڑی علامتی تبدیلی قراردےرہےہیں ۔

Muhammad Zaheer

The author is a journalist. He is currently working for a news channel.

Muhammad Zaheer مزید تحریریں

Muhammad Zaheer

Copyright © 2018 News Makers. All rights reserved.